ضمنی الیکشن کے بعدبی جے پی کی حکومت نہیں ہوگی:کمل ناتھ

بھوپال:مدھیہ پردیش کانگریس کے ریاستی صدر اور سابق وزیراعلیٰ کمل ناتھ نے کہاہے کہ انہیں یقین نہیں ہے کہ پارٹی کے 22 ایم ایل اے رخصت ہوجائیں گے۔ کمل ناتھ اتوار کے روز یہاں ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے صحافیوں سے گفتگوکررہے تھے۔انہوں نے کہاہے کہ دگ وجے سنگھ کو بھی یقین نہیں تھا کہ پارٹی کے 22 ایم ایل اے ایسے لالچ کی وجہ سے ہمیں چھوڑدیں گے۔کمل ناتھ نے کہا کہ ہمارے پاس اس کی مکمل فہرست ہے کہ ان کے 22 سابق ایم ایل اے کے زمانے میں کیا کام ہوئے تھے۔ لیکن اب وہ ان چیزوں میں نہیں جانا چاہتے ہیں۔ انھوں نے کہاہے کہ آنے والے وقت میں، ریاست کی 24 نشستوں پرضمنی انتخابات ہونے ہیں۔ ووٹرز واقف ہیں۔ وہ سمجھتے ہیں کہ ان کے ساتھ دھوکہ ہوا ہے۔ لہٰذاکانگریس کوامید ہے کہ وہ بیشترنشستوں پر انتخابات میں کامیابی حاصل کریں گے اور پھر یہ حکومت (بی جے پی) اقتدار میں کیسے رہے گی۔حکومت میں رہتے ہوئے کانگریس کے ممبران اسمبلی کی مبینہ ناراضگی کے سوال پر، کمل ناتھ نے کہاہے کہ انہوں نے کبھی بھی حکومت کو آؤٹ سورس نہیں کیا۔ وہ اپنی ہی حکومت چلایا کرتا تھا۔ وزراء اورعہدیداروں سے ملاقاتیں کیں۔ ان سب کے بیچ انہوں نے ارکان اسمبلی سے ملنے کی بھی کوشش کی۔ انہوں نے قبول نہیں کیاکہ ممبران اسمبلی ناخوش ہیں۔