یوگی کو پارٹی کا چہرہ بنائے جانے کافیصلہ مرکزی قیادت کرے گی : کیشو پرساد

لکھنؤ: یوپی اسمبلی انتخابات کو ابھی گرچہ ایک سال سے بھی کم وقت ہے ،اور اس دوران میں تمام پارٹیوں نے اپنی تیاریاں تیز کرلی ہیں ، اسی دوران بی جے پی کی طرف سے لکھنؤ سے دہلی تک میٹنگ کا دور بھی جاری ہے۔سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ کے بارے میں بھی ہر طرح کی قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں۔ پچھلے ہفتے وہ دہلی گئے اور انہوں نے وزیر اعظم نریندر مودی ، وزیر داخلہ امیت شاہ اور بی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈا سے ملاقات کی۔ اسی وقت قیاس آرایوں میں شدت پیدا ہوگئی۔ تاہم اس سلسلے میں ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں لیا گیا ہے۔دریں اثنا نائب وزیراعلیٰ کیشو پرساد موریہ نے یوگی آدتیہ ناتھ کو یوپی اسمبلی انتخابات میں پارٹی کا چہرہ بنانے کے سوال پر کھلے عام کچھ کہنے سے انکار کردیا ہے۔ کیشو پرساد موریہ نے کہا کہ اس سلسلے میں فیصلہ مرکزی قیادت کرے گی۔ موریا نے نجی ٹی وی چینل سے گفتگو میں کہا کہ یوگی آدتیہ ناتھ میرے وزیر اعلیٰ ہیں اور میں ان کا نائب وزیر اعلی ہوں، میں اس کے بارے میں کیسے بول سکتا ہوں؟ یہ ہماری پارٹی کی روایت ہے کہ مرکزی قیادت کسی ریاستی قیادت سے متعلق فیصلہ کرتی ہے۔ ریاست کے کسی بھی رہنما کو یہ حق نہیں ہے کہ وہ اس بارے میں کچھ بھی کہے۔ واضح ہو کہ مئی کے آخری دنوں میں بی جے پی جنرل سکریٹری بی ایل سنتوش لکھنؤ کے دو دن کے دورے پر آئے تھے۔ اس دوران انہوں نے یوپی کے متعدد وزراء اور ممبران اسمبلی سے ملاقات کی تھی۔