ڈبلیوایچ او نے کہا، لاک ڈاؤن میں تدریجاََنر می دی جائے،اچانک ہٹانے سے نقصان ہوگا

بینکاک:دنیابھر میں کورونا وائرس نے قہر برپا رکھاہے۔ بھارت سمیت کئی ممالک نے اس وائرس سے اپنے عوام کوبچانے کے لیے لاک ڈاؤن لاگوکررکھاہے۔لاک ڈاؤن کو لے کر اب عالمی ادارۂ صحت (WHO) کابڑابیان آیاہے۔ڈبلیوایچ اونے کہاہے کہ تمام ممالک آہستہ آہستہ ہی لاک ڈاؤن ہٹائیں۔ اگر ڈھیل دینے میں جلدی کی گئی تو انفیکشن بڑھ سکتاہے۔ڈبلیوایچ او نے یہ انتباہ ایسے وقت میں دیا ہے جب حکومتیں پابندیوں میں نرمی دے کر اقتصادی سرگرمیاں تبدیل کرنے کا منصوبہ بنا رہی ہیں۔ڈبلیوایچ اوکے لیے مغربی علاقے کے ڈائریکٹر ڈاکٹرتاکشی نے کہاہے کہ یہ احتیاط برتنے کاوقت ہے،ہمیں مستقبل کے لیے زندگی کو رہنے کے نئے طریقے کو لے کر خود کو تیار رکھنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہاہے کہ حکومتوں کو وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے لے کر محتاط رہنے کی ضرورت ہے اورلاک ڈاؤن اور سماجی فاصلے کوبرقرار رکھنے کے دیگر اقدامات آہستہ آہستہ ختم کیے جانے چاہئیں۔اس کے ساتھ ہی لوگوں کو صحت مند رکھنے اورمعیشت کوموجودہ رکھنے کے درمیان توازن قائم کرنے کی ضرورت ہے۔

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*