وقت کی دھن بنانا چاہتا ہوں ـ حماد نیازی 

 

وقت کی دھن بنانا چاہتا ہوں

اور اسے خود ہی گانا چاہتا ہوں

 

وقت سے پہلے آ گیا تھا میں

وقت سے پہلے جانا چاہتا ہوں

 

ساڑھے چھتیس سال جوڑ کے میں

ایک لمحہ بِتانا چاہتا ہوں

 

یار بے حد فضول ہے دنیا

یعنی مصرعہ اٹھانا چاہتا ہوں

 

بھول جانا تو عام بات ہے دوست

میں تجھے یاد آنا چاہتا ہوں

 

اپنے خوابوں سے اپنے رنگوں سے

ایک دنیا بسانا چاہتا ہوں

 

میری وحشت کا ترجمہ کیجے

کچھ تو ہے جو بتانا چاہتا ہوں

 

ایک تہوار ہے اداسی کا

اسکی پینٹنگ بنانا چاہتا ہوں

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*