وی وی ایس لکشمن نے کہا:وراٹ کوہلی کی کپتانی میں اصلاح کی ضرورت

نئی دہلی: ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق بلے باز وی وی ایس لکشمن نے وراٹ کوہلی کی کپتانی کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وراٹ کوہلی اپنے ساتھی کھلاڑیوں کے لیے ایک مثالی رول ماڈل ہیں، لیکن ان کی کپتانی میں اب بھی اصلاح کی گنجائش باقی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وراٹ کوہلی اپنے کام کے لیے کافی حساس رہتے ہیں اور انہوں نے مثال بن کر ٹیم کی قیادت کی ہے، لیکن وہ فیلڈنگ لگاتے وقت ہوشیار رہتے ہیں اور ٹیم میں مسلسل تبدیلیاں بھی کرتے ہیں۔ وی وی ایس لکشمن نے کہاکہ میں نے پہلے بھی کئی بار بتایا ہے کہ جب وراٹ کوہلی میدان میں ہوتے ہیں تو وہ کھیل میں مکمل طور پر غرق ہوجاتے ہیں اور یہ بات ان کے عمل سے واضح طور پر ظاہر ہوتی ہے وہ چاہے بلے بازی کریں یا فیلڈنگ اس کی لگن دیکھنے کے قابل ہے۔ جس طرح سے وہ ٹیم کی قیادت کرتے ہیں اس کا دوسرے کھلاڑیوں پر بھی مثبت اثر پڑتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ان کے تمام ساتھی کھلاڑیوں کو متاثر کرتا ہے اور اسی وجہ سے وہ ایک کپتان کی حیثیت سے مثالی رول ماڈل ہیں۔ جہاں تک کپتانی کا تعلق ہے تو اس میں ابھی بھی اصلاح کی ضرورت ہے۔ مجھے یقین ہے کہ وراٹ کوہلی میں بہتری آسکتی ہے۔ لکشمن نے کہا کہ کوہلی کے کپتان بننے کے بعد متعدد تجربات کیے گئے ہیں جس سے کھلاڑیوں میں عدم تحفظ کا احساس پیدا ہوتا ہے۔ کوہلی نے 2014 میں ٹیسٹ کی کپتانی سنبھالی تھی اور 2017 کے بعد سے وہ محدود اوورز ٹیم کے کپتان بھی ہیں۔انہوں نے کہا کہ کچھ مواقع پر میرے خیال میں وہ فیلڈنگ لگاتے وقت تھوڑا دفاعی انداز میںہوجاتے ہیں۔ لکشمن نے کہا کہ دوسری چیز یہ ہے کہ مسلسل آخری الیون میں تبدیلی کرنا ہے۔ اپنے تجربے سے میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ کوئی بھی کھلاڑی چاہے نیا ہو یا تجربہ کار استحکام اور سلامتی چاہتا ہے تاکہ وہ ٹیم کے لیے اپنی پوری کوشش کرنے پر توجہ دے سکے۔ وراٹ کو یقینی طور پر اس شعبے میں اصلاح کرنے کی ضرورت ہے اور اس سے وہ مزید بہترکپتان بن جائیں گے۔

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*