ویکسین کی کل پیداوار کا 57فی صدہی صرف ہورہاہے،مرکزی حکومت نے کیرالہ ہائی کورٹ کوڈیٹافراہم کیا

نئی دہلی:بھارت میں اس وقت 8.5 سے زیادہ کورونا ویکسین خوراکیں تیار کی جارہی ہیں۔ مرکزی حکومت نے پیر کو کیرالہ ہائی کورٹ میں یہ معلومات دی ہیں۔ معلومات میں بتایا گیا کہ اس وقت ملک بھر میں اوسطا 12 سے 13 لاکھ ویکسین دی جارہی ہیں۔اہم بات یہ ہے کہ ملک میں کورونا ویکسین کی کمی کے معاملے پر مرکزی حکومت کو حزب اختلاف کی جانب سے شدید تنقید کا سامنا ہے۔ فراہم کردہ اعدادوشمار کے مطابق ، ملک میں روزانہ کورونا ویکسین کی پیداوار 28.33 لاکھ کے لگ بھگ ہے اوراس میں سے صرف 57فی صد عوام تک پہنچ رہی ہے۔ویکسین کی کمی کی وجہ سے ، دہلی اور مہاراشٹر سمیت متعدد ریاستیں یہاں ویکسینیشن سینٹر کو بند کرنے جا رہی ہیں۔ دوسری طرف ، متعدد ریاستیں بیرون ملک سے ویکسین خریدنے کی کوشش کر رہی ہیں اگرچہ انہیں اس کوشش میں زیادہ کامیابی نہیں ملی ہے۔ کیرالہ ہائی کورٹ نے ریاست میں کویوڈ کی صورتحال کا خود بخود نوٹس لیاتھا۔اس معاملے میں 20 مئی کوسماعت میں اس نے مرکزی حکومت سے ریاستوں کوویکسین دینے کا ٹائم فریم دینے کامطالبہ کیا تھا۔حلف نامے میں ویکسی نیشن پالیسی کے بارے میں معلومات دیتے ہوئے مرکز نے ہائی کورٹ کوبتایاہے کہ ریاستوں اور مرکزی علاقوں (یو ٹی)کے لیے ویکسین کی تقسیم کا کوئی طے شدہ ہدف نہیں ہے۔ مرکز نے کہاہے کہ پونے میں واقع سیرم انسٹی ٹیوٹ آف انڈیا (ایس آئی آئی) ایک مہینے میں کوویشیلیڈویکسین کی ساڑھے 6 کروڑ خوراکیں تیار کررہا ہے۔ کوویکسین تیار کرنے والی کمپنی ، بھارت بائیوٹیک ایک ماہ میں 20 ملین خوراکیں تیار کررہی ہے۔