ویکسین اور مہنگائی سے عوام پریشان،چہرہ چمکانااور سوشل میڈیاپرکنٹرول مرکزکی ترجیح:راہل گاندھی

نئی دہلی:کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے افراط زر، کورونا وائرس کے لیے ویکسین کی کمی پر نریندر مودی حکومت کو نشانہ بنایا ہے اور کہا ہے کہ عوام ان چیزوں سے ناراض ہے جبکہ حکومت سوشل میڈیا پر پابندی عائد کررہی ہے اور اپنی جھوٹی شبیہ کو چمکانے میں مصروف ہے۔ راہل گاندھی نے مہنگائی پربھی جم کرحملہ کیا۔انھوں نے ویکسین کی کمی پربھی حکومت کونشانہ بنایاہے اورکہاہے کہ چوں کہ عوام میں اس پرکافی غصہ ہے اس لیے ان کی آوازدبانے کے لیے سوشل میڈیاپرپابندی لگائی جارہی ہے اوراسے ڈرادھمکاکرروکاجارہاہے۔راہل گاندھی نے لکشدیپ میں نئے متنازعہ احکامات کوبھی جلدواپس لینے کی اپیل کی ہے اوروزیراعظم کوخط لکھ کرکہاہے کہ وہ اس معاملے میں دخل د یںاورپرفل پٹیل کے احکامات کوواپس لیں۔پرینکاگاندھی بھی سوال پوچھ رہی ہیں کہ ویکسین کی کمی کاذمے دارکون ہے۔اسی طرح جن لاپرواہیوں کے وجہ سے ملک کے حالات ہوئے۔ان سب کے لیے کون ذمے دارہے۔کیاوزیراعظم پراس کی ذمے داری نہیں ہے۔اس درمیان بی جے پی نے اپنی شبیہ ٹھیک کرنے اورعوامی غصے کوروکنے کے لیے پالیسی بنائی ہے اوراس کے کارکنان ایک لاکھ گاؤں جائیں گے۔یوپی الیکشن کے پیش نظربی جے پی کے لیے عوامی ناراضگی مشکل ہوسکتی ہے اس لیے وہ شبیہ ـ سدھارنے میں لگی ہے۔اس پرآرایس ایس نے بی جے پی کے سنیئرلیڈروں کے ساتھ میٹنگ بھی کی ہے ۔

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*