اردو زبان کے فروغ میں سوشل میڈیا کے کردار پر یک روزہ قومی سمینار کا انعقاد

چمپارن:آج سوشل میڈیا کا دور ہے، منٹوں نہیں سیکنڈوں میں ترسیل کا عمل نہایت آسانی سے انجام پاتاہے، خواہ وہ خبروں کی ترسیل کا معاملہ ہو ،یا واقعات وحوادث سے آگاہی کی بات، سوشل میڈیا کی اہمیت وافادیت زندگی کے ہرگوشے میں نہایت تیزی سے بڑھتی جارہی ہے۔ان خیالات کا اظہار قومی کونسل برائے فروغ اردوزبان ،وزارت تعلیم ،حکومت ہند کے مالی تعاون سے غیاث فاؤنڈیشن محمد پور نرکٹیا گنج کے زیر اہتمام ’اردوزبان کے فروغ میں سوشل میڈیا کا کردار‘ کے موضوع پر منعقدہ یک روزہ قومی سمینار میں مقررین نے کیا۔سمینار کی صدارت مولانا عبد الحق اثری نے کی، نظامت جے این یو کے اسکالر نثار احمد نے کی۔مہمانان وشرکاکا استقبال غیاث فاؤنڈیشن کے جنرل سکریٹری ڈاکٹر بدر الحسن نے کیا۔کلیدی خطبہ صدر شعبۂ عربی دہلی یونیورسٹی پروفیسر نعیم الحسن اثری نے پیش کیا۔انھوں نے اپنے کلیدی خطبے میں ذرائع ابلاغ میں سوشل میڈیاکے بڑھتے اثر ورسوخ پر مفصل گفتگو کرتے ہوئے اردو زبان کے فروغ میں سوشل میڈیا کے کردار پر روشنی ڈالی اور اس کے مثبت پیغامات قومی وبین الاقوامی سطح پر پہنچانے کی سفارش کی۔ سمینار میں ڈاکٹر شفیع احمد، اسسٹنٹ پروفیسر  مہارانی جانکی کنور کالج بتیا، ڈاکٹر فاروق اعظم ، اسسٹنٹ پروفیسر شعبۂ اردو آر ،ایل، ایس ،وائی، کالج بتیا، ڈاکٹر فخر عالم اسسٹنٹ پروفیسر شعبۂ اردو ایم ،جے ،کے، کالج، بتیا، ڈاکٹر حفیظ الرحمن، اسسٹنٹ پروفیسر شعبۂ علم الحیوانات ایم، جے، کے، کالج، بتیا ، ڈاکٹر دانش کمال ریسرچ اسکالر مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی، حید ر آباد، اشفا ق عمر،شعبۂ اردو جے این یو، دہلی، اظہا رانصاری، ریسر چ فیلو،شعبۂ اردو جے این یو، نثار احمد، ریسرچ اسکالر جے این یو، محمد اسلم اسسٹنٹ پروفیسر کریسنٹ بی ایڈ کالج، مغربی چمپارن نے مقالات پڑھے ۔ اردو ٹیچرس ایسوسی ایشن کے ریاستی سکریٹری محمد فیروز عالم نے کہا کہ حکومت کے دفاتر میں اردو کے استعمال پر زور دیاجانا چاہیے۔اخیر میں غیاث فاؤنڈیشن کے چیف ٹرسٹی ماسٹر صدر الحسن نے تہنیت وتبریک کے ساتھ تمام شرکائے سمینار کا شکریہ ادا کیا۔اور آئندہ بھی اس طرح کے اہم پروگراموں کے سلسلے کو جاری رکھنے کا عندیہ دیا۔