اردوزبان اپنی شیرینی کی وجہ سے پوری دنیا میں مقبول ہورہی ہے:پروفیسر شیخ عقیل احمد

قومی اردو کونسل میں ابوظبی میں مقیم ادیب و شاعر جناب جاوید صدیقی اور مشہور صحافی ڈاکٹر سلیم خان کی آمد پر استقبالیہ تقریب

دہلی:موجودہ دور میں اردو زبان کی محبوبیت کا دائرہ روز بروز پھیل رہا ہے اور بر صغیر ہندوپاک کے علاوہ دنیا کے دیگر ممالک میں بھی اس کی مقبولیت بڑھ رہی ہے۔ان خیالات کا اظہار قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کے ڈائریکٹر پروفیسر شیخ عقیل احمد نے ابوظبی سے تشریف لائے مشہور شاعر جناب جاوید صدیقی اور مشہور فکشن نگار و صحافی ڈاکٹر سلیم خان کے اعزاز میں منعقداستقبالیہ تقریب میں کیا۔ انھوں نے کہا کہ خاص طورپر خلیجی ممالک میں اردو زبان کے تئیں لوگوں میں غیر معمولی محبت اور دلچسپی پائی جاتی ہے اور جب ہم وہاں کسی سمینار یا پروگرام میں جاتے ہیں تو اردو کے پرجوش محبین کو دیکھ کر بے انتہا مسرت ہوتی ہے۔ شیخ عقیل احمد نے جناب جاویدصدیقی کا تعارف پیش کرتے ہوئے کہا کہ موصوف ایک بہترین شاعر ہیں اور ابو ظبی میں ادبی و ثقافتی مجلسوں کے انعقاد میں پیش پیش رہتے ہیں،ان جیسے اردو کے بے لوث خادموں کی بدولت ہی غیر اردو خطوں میں اردو کا چراغ روشن ہے۔انھوں نے ڈاکٹر سلیم خان کی ادبی و صحافتی سرگرمیوں کی ستائش کی اور کہا کہ تازہ ترین موضوعات پر ان کے تجزیے اور تخلیقات قابل قدر ہوتی ہیں۔ معزز مہمانوں نے قومی کونسل کے ڈائریکٹر کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ پروفیسر شیخ عقیل احمد کی سربراہی میں کونسل اردو زبان کی گراں قدر خدمات انجام دے رہی ہے۔ اس موقعے پر ایک مختصر شعری نشست بھی ہوئی جس میں جناب جاوید صدیقی نے سامعین کو اپنی غزلیں سنائیں۔ ان کے علاوہ ڈاکٹر عبدالرشید اعظمی، جناب منیر انجم، ڈاکٹر یوسف رامپوری، محترمہ آبگینہ عارف اور جناب محمد انصر نے بھی اپنے اشعار سے حاضرین کو محظوظ کیا۔