اُردو یونیورسٹی میں بزم ادب کی آن لائن نشست

سجاد حیدر یلدرم کے انشائیے ’’مجھے میرے دوستوں سے بچاؤ‘‘ کی پیشکش اور گفتگو
حیدرآباد:بزم ادب، طلباء و طالبات کی پوشیدہ صلاحیتوں کو اجاگر کرنے اور نکھارنے کا پلیٹ فارم ہے۔ اس کے ذریعے طلبہ کی پڑھنے،لکھنے کی صلاحیتوں میں نکھار کے ساتھ ساتھ خود اعتمادی میں بھی اضافہ ہوگا۔ پروفیسر فاروق بخشی نے آج مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی، شعبۂ اردو کے آن لائن پروگرام بزم ادب میں بحیثیت مہمانِ خصوصی خطاب کرتے ہوئے ان خیالات کا اظہار کیا۔ گوگل میٹ پر منعقدہ اس پروگرام میں سجاد حیدر یلدرم کا انشائیہ ’’مجھے میرے دوستوں سے بچاؤ‘‘ کی ایم اے فائنل کے طالب علم حفیظ الرحمن نے پیشکش کی ۔ پروفیسرنسیم الدین فریس، صدر شعبۂ اردو نے کہا کہ انشائیہ مصنف کے ذہن کی آزاد ترنگ ہوتا ہے۔ ’’مجھے میرے دوستوں سے بچاؤ‘‘ میں زندگی کے ایک اہم پہلو کی جس طرح سجاد حیدر یلدرم نے عکاسی کی ہے وہ ان کی نفسیات دانی، قوت مشاہدہ اور زبان پر گرفت کا ثبوت ہے۔ انہوں نے کہا کہ طلبہ زمانۂ طالب علمی کو غنیمت جان کر اس کا مکمل فائدہ اٹھائیں۔ ڈاکٹر ابوشحیم، اسوسیئٹ پروفیسر نے مشورہ دیا کہ طلبہ مضمون وغیرہ کی پیشکش سے قبل کسی استاذ سے اصلاح کروالیں تاکہ کسی قسم کی دقت نہ ہو۔ انہوں نے حفیظ الرحمن کو عمدہ پیشکش پر مبارکباد دی۔ ڈاکٹر فیروز عالم، اسسٹنٹ پروفیسر نے کہا کہ بزم ادب طلبہ کی تحریری، تقریری اور تخلیقی صلاحیتوں کو اجاگر کرنے کے لیے قائم کیا گیا ہے۔ طلباء و طالبات کو اس کے جلسوں میں پابندی سے شرکت کرنی چاہیے۔ شعبۂ اردو کے طالبہ فرحین خانم نے نظامت کی اور طالب علم محمد ارشد القادری نے شکریہ اداکیاہے۔