یوپی میں حقہ بار پر پابندی، الہ آباد ہائی کورٹ کا فیصلہ

لکھنؤ:الہ آباد ہائی کورٹ نے اتر پردیش میں چل رہے حقہ بار پر پابندی عائد کرتے ہوئے حکم دیا ہے کہ کسی بھی ریستوراں یا کیفے میں حقہ بارکو چلانے کی اجازت نہیں ہے۔ نیز 30 ستمبر تک اس حکم پر عمل کرنے کی رپورٹ بھی طلب کی گئی ہے۔یہ حکم جسٹس ششکانت گپتا اور جسٹس شمیم احمد کی ڈویژن بنچ نے لکھنؤ یونیورسٹی قانون کے طالب علم ہرگووند پانڈے کے خط پر عوامی مفادات کی درخواست پر سماعت کرتے ہوئے دیا۔ معلومات کے مطابق لکھنؤ یونیورسٹی کے قانون کے طالب علم ہرگووند پانڈے نے الہ آباد ہائی کورٹ میں ایک پی آئی ایل دائر کی تھی اور حقہ بار نہ چلانے کی بات کہی تھی، جس کے لیے قانون کے طالب علم نے حکام کو ایک خط لکھ کر کارروائی کا مطالبہ کیا تھا، لیکن افسران کی طرف سے کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔