یوپی میں کورونا پر آرڈیننس پاس

کوورانٹین سے بھاگنے پر 3 سال اور ہیلتھ ورکرس کے حملے پر 7 سال تک کی ہوگی جیل
لکھنؤ:
کورونا وائرل مہاماری کے درمیان اتر پردیش میں یوگی کابینہ نے آج کورونا وائرس کے جانبازوںکو لے کر آرڈیننس پاس کر دیا ہے۔ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی قیادت میں اتر پردیش صحت عامہ اور مہاماری وبا کنٹرول آرڈیننس2020میں صحت، صفائی اور سیکورٹی اہلکاروں کو لے کر سخت قانون بنائے گئے ہیں۔یوپی میں اگر کوئی کورونا کا مریض جان بوجھ کر پبلک ٹرانسپورٹ سے سفر کرتا ہے تو اسے ایک سے تین سال تک کی سزا ہو سکتی ہے۔کووارنٹین سینٹر سے فرار لوگوںکو بھی اتنی ہی سزا اور 1 لاکھ تک کا جرمانہ لگ سکتا ہے۔نئے قانون کے مطابق ہیلتھ ورکرس تمام پیرامیڈیکل اسٹاف، پولیس اہلکاروں اور حفظان صحت کے اہلکاروں کے ساتھ ساتھ حکومت کی طرف سے تعینات کسی بھی کورونا واریئرسے کی گئی بدتمیزی یا حملے پر چھ ماہ سے لے کر سات سال تک کی سزا کا قانون ہے۔ اتنا ہی نہیں 50 ہزار سے لے کر 5 لاکھ تک کے جرمانے کا بھی انتظام کیا گیا ہے۔ڈاکٹروں، صفائی اہلکاروں، پولیس اہلکاروں اور کسی بھی کورونا جانبازوںپر تھوکنے یا گندگی پھینکنے پر اور آئیسولیشن توڑنے پر بھی ہوگی اس قانون کے تحت سخت کارروائی کی جائے گی۔میڈیکل اسٹاف کے خلاف گروپ کو اکسانے یا بھڑکانے پر بھی نئے قانون کے تحت سخت کارروائی ہوگی۔ اس کے لئے دو سے پانچ سال تک کی سزا اور پچاس ہزار سے 2 لاکھ تک کے جرمانے کا بھی انتظام کیا گیا ہے۔نئے قوانین کے مطابق وزیر اعلی کی صدارت میں ایک صوبہ وبا کنٹرول اتھارٹی بنے گا، جس میں مرکزی سیکرٹری سمیت سات دیگر افسران رکن ہوں گے۔ تین رکنی ضلع وبا کنٹرول اتھارٹی ہوگی، جس کا صدر ڈی ایم ہوگا۔