یوپی میں اب نمک گھوٹالہ،وزیر جے پرکاش نشاد سے تفتیش کی تیاری میں پولیس

لکھنؤ:اترپردیش میں لائیو اسٹاک اسکینڈل کے بعد حکام اور وزرا کی ملی بھگت سے ایک اور اسکینڈل کی افواہیں پھیل رہی ہیں۔ محکمہ فوڈ اینڈ سپلائیز کو نمک کی سپلائی کا معاہدہ دینے کے نام پر کروڑوں روپئے کے فراڈ میں وزیر مملکت جئے پرکاش نشاد کے ملوث ہونے کا شبہ ہے۔ پولیس معلومات جمع کرنے کے لئے وزیر مملکت سے تفتیش کرے گی۔وزیر مملکت جئے پرکاش نشاد کو پوچھ گچھ کے لئے نوٹس بھیجنے کی تیاری ہے۔ لائیو اسٹاک فراڈ کیس میں اے سی پی گومتی نگر تفتیش کرچکے ہیں۔ان دونوں فراڈ کے اہم ملزم آشیش رائے کا وزیر کے دفتر میں آنا جاناتھا ۔ پولیس کو شبہ ہے کہ وزیر کو بھی اس نئے دھوکہ دہی کی معلومات ہوسکتی ہے۔ اس سے قبل یوپی کے محکمۂ مویشی میں آٹے کی سپلائی کے نام پر دھوکہ دہی ہوئی تھی۔ اس میں گجرات کے تاجر نریندر پٹیل کے ذریعہ ایک ایف آئی آر درج کی گئی تھی، جس میں افسران نے محکمہ کو معاہدہ دینے کے نام پر کروڑوں روپئے کا فراڈ کیا تھا۔ محکمہ مویشی کے معاملے کی جانچ کے دوران محکمہ فوڈ اینڈ سپلائیز کا فراڈبھی سامنے آگیا۔