ترنمول جیتی توبنگال کشمیر بن جائے گا،شیاماپرسادنہ ہوتے تواسلامی ملک بن جاتا:بی جے پی

کولکاتا:مغربی بنگال اسمبلی انتخابات میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے لیڈر شبھیندو ادھیکاری نے کہاہے کہ اگر ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) دوبارہ اقتدار میں لوٹ آئی ،تو ریاست کشمیر میں بدل جائے گی۔اسی طرح کابیان امت شاہ نے 2015کے الیکشن میں بہارکے بارے میں دیاتھاکہ اگریہاں یوپی اے جیتاتوپاکستانی میں پٹاخے پھوٹیں گے۔ این ڈی ٹی وی کے مطابق بیہالہ میں ایک جلسہ عام کومذہبی رنگ دینے اورفرقہ وارانہ خطوط پرتقسیم کرنے کی کوشش کرتے ہوئے انھوں نے کہاہے کہ اگر شیاماپرسادمکھرجی نہ ہوتے تو یہ ملک ایک اسلامی ملک بن جاتا اور ہم بنگلہ دیش میں رہتے۔اگر وہ (ٹی ایم سی) دوبارہ اقتدار میں آتی ہے تومغربی بنگال کشمیر بن جائے گا۔بی جے پی کے لیے بس فرقہ پرستی ہی الیکشن کاہتھیارہے۔ترقی کے ایجنڈے ،مہنگائی اوربے روزگاری بی جے پی الیکشن کے وقت بھول جاتی ہے۔شبیھندو نے کہا ہے کہ نندی گرام میرے لیے چیلنج نہیں ہے۔ میں ممتا بنرجی کو یہاں سے شکست دینے اورانھیں کولکاتا واپس بھیجنے جارہا ہوں ،مجھے پارٹی کی قومی قیادت کی ذمہ داری کا شکریہ ادا کرنا ہے۔ میں کنول کوکھلانے کے لیے کام کروں گا۔ پورے مغربی بنگال اور نندی گرام میں وہ (ممتا بنرجی) ہارنے والی ہیں۔