مغربی بنگال:ٹی ایم سی کے ایک اور ممبراسمبلی نے بھگوا چولہ پہن لیا

کولکاتہ:اسمبلی انتخابات سے قبل ممتا حکومت کے ایک اور ایم ایل اے نے منگل کو بی جے پی میں شمولیت اختیار کرلی۔ ڈائمنڈ ہاربر کے رکن اسمبلی دیپک حالدار نے پیر کو ٹی ایم سی سے استعفیٰ دے دیا۔ انہوں نے بی جے پی لیڈر مکل رائے اور شوبھندو ادھیکاری کی موجودگی میں بی جے پی میں شمولیت اختیار کی۔ بنگال میں ہونے والی سیاسی شورش کا اندازہ اس سے لگایا جاسکتا ہے کہ پچھلے 46 دنوں میں ٹی ایم سی کے 11 رہنماؤں نے بی جے پی کا دامن تھام لیاہے ۔ٹی ایم سے بی جے پی میں شامل ہونے کا عمل 19 دسمبر سے شروع ہوا ہے ، جب شوبھندوادھیکاری رکن اسمبلی سنیل منڈل اور دیگر 10 ممبران اسمبلی کے ساتھ بی جے پی میں شامل ہوئے، ان میں سے 5 ممبران اسمبلی ترنمول کے تھے۔ وزیرکھیل لکشمی رتن شکلا نے بھی پچھلے ماہ وزیر کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ قیاس آرائی کی جارہی ہے کہ وہ سیاست سے سبکدوش ہوسکتے ہیں۔ریاست میں ممتا بنرجی حکومت کی مدت 30 مئی کو ختم ہوگی۔ لہٰذا اپریل-مئی میں ہی 294 اسمبلی نشستوں کے لیے انتخابات ہوں گے۔