ملک کے ہزاروں منریگا مزدوروں کو اجرت نہیں ملی، دہلی میں احتجاج

نئی دہلی: ملک بھر میں مہاتما گاندھی نیشنل رورل ایمپلائمنٹ گارنٹی ایکٹ (MGNREGA) کے تحت کام کرنے والے ہزاروں مزدوروں کو اجرت نہیں ملی ہے۔ مرکزی حکومت پر منریگا کارکنوں کا 6000 کروڑ روپے سے زیادہ کا مقروض ہے۔ اس کی وجہ سے مختلف ریاستوں کے ہزاروں منریگا کارکنوں کو جنتر منتر کی طرف جانا پڑا۔ ناراض منریگا کارکنوں کو دہلی آکر احتجاج کرنا پڑا۔ ملک بھر سے منریگا کارکن گزشتہ کچھ دنوں سے دہلی کے جنتر منتر پر کھڑے ہیں۔ اس دھرنے میں ملک کے مختلف حصوں سے رامفل اور مستری دیوی جیسے ہزاروں مزدور آئے ہیں سیتا پور سے آنے والے رامفل کے پاس منریگا کی اجرت کے بقایا جات ہیں، جبکہ مستری دیوی، جو راجستھان کے الور سے آئی ہیں، کو منریگا کی بقایا اجرت کے ساتھ فوٹو اپ لوڈ کرنے کے نظام میں مسئلہ ہے۔ رامفل دیوی نے کہا، گزشتہ سال کی منریگا کی اجرت ہماری بقایا ہے۔ شہر کے کارخانوں میں کام نہیں ہے۔ گاؤں میں منریگا مزدوری کرنے کے بعد کوئی ادائیگی نہیں ہوتی ہے راجستھان کے الور سے آنے والی منریگا مزدور مستری دیوی نے کہا، بڑا مسئلہ یہ ہے کہ ایپ کی تصویر نہیں آتی، اگر ایپ نہیں کھولی جاتی ہے، تو ادائیگی نہیں ملتی ہے۔ جبکہ گزشتہ سال کی ادائیگیاں زیر التواء ہیں۔ خاندان کے پاس آدھا بیگھہ زمین ہے، اس پر تین لڑکے ہیں۔ ایک نے گھر بنایا ہے۔