تیجسوی یادو کا الٹی میٹم:ایک ماہ کے اندر 19 لاکھ بیروزگاروں کو روزگار نہ ملا تو چلائیں گے تحریک

پٹنہ:پہلے دن کے اسمبلی اجلاس کے اختتام کے بعد تیجسوی یادو نے نتیش کمار پر حملہ کردیا ہے۔ یہاں تک کہ انہوں نے نتیش کمار کو بدعنوانی کا بھیشم پتامہ بھی کہہ دیا ۔ تیجسوی نے الٹی میٹم دیتے ہوئے کہا کہ اگر 19 لاکھ بیروزگاروں کو ایک ماہ کے اندر روزگار نہیں ملا تو وہ ایک عوامی تحریک چلائیں گے۔ انہوں نے الزام لگایا ہے کہ جے ڈی یو چوری سے آئی ہے اور پھر بھی تھرڈ پارٹی بن گئی ہے۔ آر جے ڈی سب سے بڑی پارٹی بن کر آئی ہے۔ تیجسوی کے مطابق عوام کا مینڈیٹ ہائی جیک کر لیا گیا ہے۔تیجسوی نے کہا کہ نتیش کابینہ کے درجنوں وزراء پر سنگین الزامات ہیں۔ کرپٹ انسان کو وزیر تعلیم بنایا گیا۔ اس معاملے پر گرفت کے بعدوزیر تعلیم کو بدلا گیا ۔ میوالال جیسے لوگوں کو آخر کیوں وزیر بنایا گیا؟تیجسوی نے اپنے اوپر لگے بدعنوانی کے الزمات پر کہا کہ ڈپٹی چیف منسٹر رہتے ہوئے کیا مجھ پر کوئی الزام تھا؟ کیس گھمایا جارہا ہے۔ ان کی پالیسی غلط تاثر پیدا کرنا ہے۔تیجسوی نے کہاکہ میراچیلنج ہے کہ وزیراعلیٰ مجھ پر عائد الزامات کو ثابت کرکے دکھائیں ۔تیجسوی کے مطابق نتیش کمار کے 15 سالہ حکمرانی میں 60 بڑے گھوٹالے ہوئے ہیں۔ بدعنوانوں کا دفاع کرنا نتیش کمار کی فطرت ہے۔ اشوک چودھری کے معاملے میں تیجسوی نے کہا کہ نتیش کمار کو آکر اس معاملے پر وضاحت پیش کرنی چاہئے۔ اشوک چودھری کے اہل خانہ پر سنگین الزامات ہیں۔