تیجسوی یادونے بہارحکومت کوگھیرا،کہا،بے حسی کی کوئی حدتوہوگی

پٹنہ:ملک بھر میں لاک ڈاؤن کا تیسرا مرحلہ جاری ہے۔ ایسے میں اب ملک بھر میں موجودمزدور بے روزگاری کی وجہ سے اپنے گھرواپس ہونے کے لیے مجبورہیں۔ بہار میں راشٹریہ جنتا دل کے لیڈرتیجسو ی یادونے ریاستی حکومت پر دوٹویٹ کرکے نشانہ لگایاہے۔ انہوں نے ویڈیوٹویٹ کرکے لکھا ہے کہ کس طرح بسوں سے تارکین وطن محنت کشوں کو ان کے گھروں سے کوسوں دور چھوڑ کر جانے کے لیے کہہ دیاگیا۔ اپنے پہلے ٹوئیٹ میں ویڈیو شیئر کرتے ہوئے تیجسوی یادونے لکھاہے کہ ہزاروں کلومیٹرمصیبت جھیل کر،بھوکے پیاسے یہ لوگ بہارپہونچے۔ پھراسٹیشن سے کوارنٹائن سینٹرپہنچانے کی بجائے دیر رات مزدوروں کو بیچ راستے سڑکوں پر چھوڑ دیاجاتا ہے۔ افسر کہتے ہیں کہ اب پیدل گھرجاؤ۔ یہ ظاہر ہوتا ہے کہ بہار حکومت کا نیا نعرہ ہے کووارنٹان گیا وائرس لانے۔انہوں نے اپنے ایک اور ٹویٹ میں لکھاہے کہ بے حسی کی کوئی تو حد ہوتی ہوگی؟ کیابہارحکومت کی طرف سے تارکین وطن مزدوروں کے ساتھ جو سلوک کیا جا رہا ہے وہ معافی کے قابل ہے؟ کیا تارکین وطن مزدوروں کی اسکریننگ اور انہیں کوارنٹائن سینٹر نہیں بھیج کربہار حکومت انفیکشن کو دعوت نہیں دے رہی ہے؟