ٹیم انڈیامیں تبدیلیوں کے امکانات،محمدسراج کی شمولیت متوقع

ملبورن:ہفتہ کو ایڈیلیڈ ٹیسٹ کی دوسری اننگ میں ہندوستانی ٹیم اپنے کم ترین اسکور 36پر آؤٹ ہوگئی ، جس سے آسٹریلیاکوڈے نائٹ ٹیسٹ میں آٹھ وکٹوں کی شاندار کامیابی حاصل ہوگئی۔ چار میچوں کی ٹیسٹ سیریز میں بھارت 0-1 سے پیچھے ہے۔اگلاٹیسٹ میچ ملبورن میں 26 دسمبر سے کھیلاجائے گا۔ اس شکست کے بعد ٹیم انڈیا کی مشکلات آنے والے میچوں میں اور بھی بڑھ جائیں گی کیونکہ کپتان وراٹ کوہلی ہندوستان واپس آئیں گے۔باکسنگ ڈے ٹیسٹ کے لیے کھیلے جانے والے گیارہ میں ہندوستان بہت سی تبدیلیاں لا سکتا ہے۔ انڈیا ٹوڈے کے ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ ملبورن میں ہونے والے اگلے ٹیسٹ میچ میں ہندوستانی ٹیم کے پلیئنگ گیارہ میں چار تبدیلیاں کی جاسکتی ہیں۔ کے ایل راہل ٹیسٹ ٹیم میں دوبارہ اپنی جگہ حاصل کرنے کے لیے تیار ہیں اوروہ وراٹ کوہلی کی جگہ مڈل آرڈر (نمبر 4) میں جگہ لے سکتے ہیں۔ زخمی محمدسمیع کی غیرموجودگی میں فاسٹ بالر محمدسراج اپناپہلا ٹیسٹ کھیل سکتے ہیں۔ 26 سالہ فاسٹ بالر محمد سراج نے ٹیسٹ سیریزسے قبل کھیلے گئے پریکٹس میچوں میں مجموعی طورپر5 وکٹ لیے تھے جس میں پہلے پریکٹس میچ میںتین وکٹیں شامل ہیں۔سراج نے 38 فرسٹ کلاس میچوں میں 23.44 کی اوسط سے 152 وکٹیں حاصل کی ہیں۔ بھارتی ٹیم مینجمنٹ پرتھوی شا کواگلے ٹیسٹ میچ سے باہرکرسکتاہے۔ پہلے ٹیسٹ میچ میں پرتھوی شا نے دونوں اننگ میں 0 اور 4 رنز بنائے تھے۔ فیلڈنگ کے دوران آسان کیچ چھوڑدیا ۔ شا کی بیٹنگ میں تکنیکی کمزوری آسٹریلیا کے سامنے آ گئی۔ بیٹنگ کے دوران پرتھوی شا کے بیٹ اور پیڈ کو بڑا فرق ملتاہے جس کی وجہ سے وہ بولڈ ہو رہے ہیں۔ شوبن گیل دسمبر سے ملبورن میں شروع ہونے والے دوسرے ٹیسٹ میچ میں پرتھوی شا کی جگہ ٹیسٹ میچ میں قدم رکھ سکتے ہیں۔ نوجوان بلے باز شبمان گل نے ٹیسٹ سیریز سے قبل کھیلے گئے ڈے نائٹ پریکٹس میچ میں 43 اور65 رنزبنائے تھے۔ دریں اثنا سینئر وکٹ کیپر وردھیمان ساہا کوبھی اگلے ٹیسٹ کے پلینگ گیارہ سے باہر کرنا پڑ سکتا ہے۔ ساہا ایک وکٹ کیپر کے ساتھ ساتھ اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کررہی ہیں لیکن بلے کے ساتھ فلاپ ہو رہی ہیں۔ وکٹ کیپر وریدھیمان ساہا نے ایڈیلیڈ ٹیسٹ کی پہلی اننگ میں 9 اور دوسری اننگ میں 4 رنز بنائے جس سے ان کے انتخاب پر بھی سوالات اٹھے۔ ملبورن میں ہونے والے اگلے ٹیسٹ میچ میں ردھیمان ساہا کی جگہ وکٹ کیپربلے باز کی حیثیت سے ریشبھ پنت اچھے انتخاب ہوسکتے ہیں۔ ریشبھ پنت بیٹنگ میں وریدھیمان ساہاسے بہتر ہیں۔ ٹیسٹ سیریزسے قبل کھیلے جانے والے ڈے نائٹ پریکٹس میچ میں ریشبھ پنت 73 گیندوں میں سنچری بنا کر پلے الیون میں سلیکشن کادعویٰ کیا۔ ریشبھ پانت نے آسٹریلیا کے ٹور 2018-19 پر چار میچوں کی ٹیسٹ سیریز کے 4 میچوں میں 50 سے زائد کی اوسط سے 350 رنز بنائے تھے ، جس میں ایک سنچری بھی شامل ہے۔ محمدسمیع کے ہاتھ کو اسکین کیا گیا تھا ، جس میں ہیئر لائن فریکچر کو بیان کیا گیا ہے۔سمیع درد کی وجہ سے بھی ہاتھ نہیں اٹھا سکے اور اسی وجہ سے ریٹائرڈہوئے۔انھوں نے پھربولنگ بھی نہیں کی۔ اب بھارت کو وراٹ کوہلی اور محمد سمیع کا آپشن ڈھونڈنا ہوگا۔

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*