تمل ناڈو میں لاک ڈاؤن کی 30 جون تک توسیع،پبلک ٹرانسپورٹ بحال

چنئی:تمل ناڈو حکومت نے کورونا وائرس کو قابو کرنے کے لئے نافذ لاک ڈاؤن کی مدت 30 جون تک کے لئے بڑھا دی ہے۔ حالانکہ حکومت نے پبلک ٹرانسپورٹ سہولیات کو جزوی طور پر بحال کرنے اور کام کرنے والی جگہوں پر زیادہ لوگوں کی منظوری دینے سمیت کچھ رعایت دی ہے۔وزیر اعلی کے پلانیسوامی نے کہا کہ مذہبی مقامات، بین ریاستی بس نقل و حمل، میٹرو اور مضافاتی ریل سروس پر پابندی جاری رہیں گی۔ عوامی نقل و حمل ایک جون سے جزوی طور پر بحال کی جائے گی، لیکن چنئی، کانچی پورم، تروللور اور چینگل پیٹ اضلاع میں بسیں نہیں چلیں گی کیونکہ ریاست میں کورونا کے سب سے زیادہ مریض یہیں سے ملے ہیں۔ پلانیسوامی نے کہا کہ ذاتی بسوں کو متبادل راستوں پر چلنے کی اجازت دی جائے گی۔انہوں نے ایک بیان میں کہاکہ کو رونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لئے مرکزی وزارت داخلہ کے نوٹیفکیشن کے مطابق اور ریاست ڈیزاسٹر مینجمنٹ قانون کے تحت کرفیو 30 جون تک کے لئے بڑھا دیا گیا ہے۔تمل ناڈو ملک میں کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ریاستوں میں سے ایک ہے۔ریاست میں ہفتہ کو ایک ہی دن میں سب سے زیادہ 938 نئے کیس سامنے آئے، جس کے بعد ریاست میں متاثرہ ہوئے لوگوں کی تعداد بڑھ کر 21184 پہنچ گئی ہے۔ریاستی حکومت نے نرددھ علاقوں کو چھوڑ کر باقی جگہوں پر بہت سی دیگر رعایت دیئے جانے کا بھی اعلان کیا۔آفس میں زیادہ ملازم کی موجودگی اور شوروم اور زیورات کی دکانوں کو دوبارہ کھولنے کی اجازت دے دی گئی ہے، لیکن مال بند رہیں گے۔مرکزی حکومت نے لاک ڈاؤن ہٹانے کے پہلے مرحلے کے تحت آٹھ جون سے نافذ ہونے والے موجودہ ہدایات کی ہفتہ کو اعلان کیا، جن میں ملک میں 25 مارچ سے نافذ لاک ڈاؤن میں کافی چھوٹ دی گئی ہے۔اس کے تحت شاپنگ مال، ریستوران اور مذہبی مقامات کو کھولنے کی اجازت دے گا۔مگر ملک کے انفیکشن سے بری طرح متاثرہ علاقوں میں 30 جون تک لاک ڈاؤن پر سختی سے عمل ہوتا رہے گا۔