طاہرحسین کی ضمانت کی درخواست پرسماعت 29اکتوبرتک ملتوی

نئی دہلی:دہلی کی ایک عدالت نے جیل میں بند طاہر حسین کی تین ضمانتوں کی درخواستوں کے سلسلے میں پولیس تھانہ دیالپورمیں درج کیس کی سماعت ملتوی کردی ہے۔ اب تینوں ضمانتوں کی درخواستوں پر اگلی سماعت 29 اکتوبر کو ہوگی۔ آج طاہرحسین کی جانب سے وکیل کے کے مینن اور ادیت بالی نے دلائل مکمل کرلیے ہیں لیکن دہلی پولیس کی جانب سے وکیل منوج چودھری کے دلائل ابھی تک مکمل نہیں ہوسکے ہیں۔پہلی سماعت کے دوران دہلی پولیس نے کہا ہے کہ وکیل منوج چودھری چاند باغ پلیاکے قریب ہونے والے تشدد کے تمام معاملوں کی وکالت کریں گے۔ ان میں سے ایک مقدمہ دیال پور پولیس اسٹیشن میں درج کی گئی ایف آئی آر نمبر 120 ہے۔ ایف آئی آر میں طاہر حسین کے خلاف دفعہ 147،148 ، 149،427 ، 436 اور120 بی کے تحت الزامات دائر کیے گئے ہیں۔ دوسری ایف آئی آر بھی دیالپور پولیس اسٹیشن میں درج کی گئی ایف آئی آرنمبر 117 ہے ، جس پر دفعہ 147 ، 148 ، 149،427 اے ، 436 اور 120 بی کے تحت الزامات ہیں۔تیسرا مقدمہ تھانہ دیپال پورکابھی ہے ، جس میں ایف آئی آر نمبر 80 پر دفعات 147 ، 148،149،427،436 اور 120 بی کے تحت مقدمہ درج کیاگیاہے ۔ اس کے علاوہ پبلک پراپرٹی کو ہونے والے نقصان سے بچاؤ کے قانون کی دفعہ 3 اور 4 بھی شامل ہے۔ پولیس نے ان تمام معاملات میں طاہر حسین کو ماسٹر مائنڈ بتایا ہے۔ 21 اگست کو کرکرڈوماکی عدالت نے طاہرحسین کے خلاف ایف آئی آر میں داخل کردہ چارج شیٹ کا نوٹس لیا ہے۔