طالبان کابل پہنچ گئے،عام معافی کا اعلان،دارالحکومت پر بزور کنٹرول حاصل نہیں کریں گے:ترجمان طالبان

 

کابل :افغان طالبان نے کابل پہنچ پرافغان دارالحکومت کو بزور طاقت فتح نہ کرنے اورشہریوں اور حکومتی اہلکاروں کیلئے عام معافی کا اعلان کردیا ہے۔ طالبان نے کابل کو بزور طاقت فتح نہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ امارات اسلامی کے اعلامیہ میں طالبان کو کابل کے دروازوں پر کھڑے رہ کر اندر جانے سے گریز کی ہدایت کی گئی ہے جبکہ تمام شہریوں اور حکومتی اہلکاروں کے لئے عام معافی کا اعلان کرتے ہوئے مذاکرات کے ذریعے پرامن طریقے سے کابل کا کنٹرول حاصل کرنے کا عزم کیا ہے۔واضح رہے کہ امریکی فورسز کے انخلاء کے بعد افغانستان میں طالبان کے قبضوں میں مزید تیزی آگئی۔طالبان شمالی افغانستان میں آخری بڑے شہر مزار شریف میں داخل ہو گئے۔مسلسل قبضے کی اطلاعات موصول ہو رہی ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ چند روز کے دوران طالبان کی کاررائیوں میں تیزی دیکھنے میں آئی ہے اورگزشتہ شب طالبان مزارشریف میں داخل ہو گئے جہاں قبضے کی اطلاعات موصول ہو رہی ہیں۔ مزار شریف شمالی افغانستان میں آخری بڑا شہر اور دارالحکومت تھا۔ دوسری جانب ملک کے دیگر حصوں میں بھی طالبان کی کارروائیاں جاری ہیں اورطالبان نے فاریاب صوبے کے ضلع پشتون کوٹ پر قبضہ کر لیا ہے جبکہ تمام سرکاری عمارات طالبان کے کنٹرول میں ہیں۔طالبان نے لغمان کے صوبائی دارالحکومت مھترلام پر بھی قبضہ کر لیا ہے۔