سپریم کورٹ نے اعظم خان کی اہلیہ اور بیٹے کی ضمانت کے خلاف یوپی حکومت کی درخواست پر سماعت ملتوی کردی

سپریم کورٹ نے اعظم خان کی اہلیہ اور بیٹے کی ضمانت کے خلاف یوپی حکومت کی درخواست پر سماعت ملتوی کردی
نئی دہلی:ایس پی رہنما اعظم خان کی اہلیہ اور بیٹے محمد عبد اللہ کی ضمانت کے خلاف یوپی حکومت کی درخواست پر سپریم کورٹ نے سماعت اگلے ہفتے کے لیے ملتوی کردی۔ یوپی حکومت نے الہ آباد ہائی کورٹ کے ضمانت دینے کے فیصلے کو چیلنج کیا ہے۔ دراصل اکتوبر 2020 میں الہ آباد ہائی کورٹ نے فرضی برتھ سرٹیفکیٹ بنوانے کے الزام میں اعظم خان کی اہلیہ تنزین فاطمہ اور بیٹے محمد عبد اللہ اعظم خان کی درخواست ضمانت منظور کرلی تھی ۔ اسے فوری طور پر رہا کرنے کا حکم دیا تھا۔ہائی کورٹ نے محمد اعظم خان کی ضمانت کی درخواست کو بھی منظور کرلیا تھا ، لیکن شکایت کنندہ آکاش سکسینہ کا بیان درج ہونے کے بعد انہیں رہا کرنے کا حکم دیا تھا۔ عدالت نے علی گڑھ عدالت کے کھلتے ہی تین ماہ کے اندر رشکایت کنندہ کا بیان درج کرنے کی امید کی ہے۔ یہ حکم جسٹس سدھارتھ نے ڈاکٹر تنزین فاطمہ ، محمد اعظم خان اور محمد عبداللہ اعظم خان کی ضمانت کی درخواست کوخارج کرتے ہوئے دیا ہے۔