ایس پی کے رکن پارلیمنٹ اعظم خان کی صحت مستحکم

لکھنؤ:سماج وادی پارٹی کے سینئر رہنما اور رام پورکے ممبرپارلیمنٹ محمد اعظم خان کی طبیعت مستحکم ہے اور ان کا یہاں میدانتا اسپتال میں علاج چل رہا ہے۔ہفتہ کو میدانتااسپتال کی طرف سے جاری کردہ بلیٹن میں بتایا گیاہے کہ آج 22 مئی کو ، 72 سالہ ایس پی رکن پارلیمنٹ اعظم خان کو دو لیٹر آکسیجن کے ساتھ وارڈمیں رکھا گیا ہے اور ان کی طبیعت اب بھی مستحکم ہے۔ اسی دوران ان کے بیٹے محمد عبداللہ خان (30) کی صحت کی حالت مستحکم ہے اور انہیں بھی ڈاکٹروں کی نگرانی میں رکھا گیا ہے۔محمد اعظم خان اور ان کے بیٹے عبداللہ خان ، جو سیتاپور کے ضلعی جیل میں کورونا وائرس سے متاثر ہوئے پائے گئے تھے ، انہیں 9 مئی کو لکھنؤ کے میدانتا اسپتال منتقل کردیا گیا تھا۔سیتا پور ڈسٹرکٹ جیل کے ڈپٹی جیلر اونکر پانڈے نے بتایاہے کہ اعظم خان اور ان کے بیٹے عبداللہ کو 30 اپریل کو آر ٹی پی سی آر کی تحقیقات میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوگئی تھی۔ 2 مئی کو انتظامیہ نے اعظم خان کوبہتر علاج کے لیے لکھنؤکے کنگ جارج میڈیکل کالج لے جانے کا مشورہ دیا لیکن انہوں نے سیتا پور جیل سے باہر جانے سے انکار کردیا۔ تاہم صحت خراب ہونے کے بعد ، 9 مئی کو ، وہ لکھنؤ آنے پر راضی ہوگئے۔