سورت کی عدالت نے ’سیمی ‘کے ممبر ہونے کے الزام میں گرفتار 122 افراد کو بری کردیا

سورت:گجرات کی سورت کی ایک عدالت نے اسٹوڈنٹ اسلامک موومنٹ آف انڈیا (سیمی) کے ممبر کی حیثیت سے دسمبر 2001 میں یہاں منعقدہ اجلاس میں شرکت کے الزام میں 122 افراد کو بری کردیا۔ ان سب کویو اے پی اے کے تحت گرفتارکیاگیاتھا۔ چیف جوڈیشل مجسٹریٹ اے این ڈیو کی عدالت نے شک کا فائدہ دیتے ہوئے ملزمین کو بری کردیا۔ کیس کی سماعت کے دوران پانچ ملزمان ہلاک ہوگئے۔ عدالت نے اپنے حکم میں کہاہے کہ استغاثہ ،ٹھوس ، قابل اعتماد اور اطمینان بخش ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہا ہے کہ یہ ملزمین سیمی کے ساتھ شامل تھے اور کالعدم تنظیم کی سرگرمیوں کوبڑھانے کے لیے جمع تھے۔عدالت نے کہا کہ ملزم کو یو اے پی اے کے تحت سزا نہیں سنائی جا سکتی۔سورت پولیس نے کالعدم تنظیم کی سرگرمیوں کو بڑھانے کے لیے ساگرم پورہ شہر کے ایک ہال میں میٹنگ کے لیے سیمی کے ممبر ہونے کے الزام میں 28 دسمبر 2001 کو یو اے پی اے کے تحت کم سے کم 127 افراد کو گرفتار کیا تھا۔ 27 ستمبر 2001 کومرکزی حکومت نے سیمی پر پابندی عائد کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیاتھا۔