شیوسینا لیڈر کا مٹھائی فروش کو حکم:دکان کے نام سے لفظ ’کراچی‘مٹایا جائے،سنجے راوت نے کہا:شیوسینااس حرکت کی حمایت نہیں کرتی

ممبئی:مہاراشٹرا میں نام نہاد طو ر پر مراٹھی اعزاز کے نام پر مذہبی یا لسانی طور پر اقلیتوں کے ساتھ بدسلوکی کے واقعات بدستور جاری ہیں۔ ایسے ہی ایک واقعہ میں شیوسینا رہنما ایک مٹھائی فروش کو دھمکی دیتے ہوے دیکھے گئے ہیں ،جس میں وہ مٹھائی فروش کو دکان کے نام سے لفظ’ کراچی‘ کو مٹانے کیلئے دباؤ ڈالا ہے۔ویڈیو میں مٹھائی فروش شیوسینا کے نیتا کے سامنے ہاتھ جوڑے نظر آرہا ہے،اپنے آپ کو سماجی کارکن بتانے والے شیوسینا کے رہنما نتن نندگاؤنکر کی یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی ، جس کے بعد انہیں کافی تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔اس دو منٹ کی ویڈیو میں شیوسینا رہنمامٹھائی کی دکان کے مالک کے ساتھ نظر آرہے ہیں۔ تاہم یہ معلوم نہیں ہو سکا ہے کہ یہ ویڈیو کب کا ہے اور کس نے اسے سوشل میڈیا پر شیئر کیا ہے۔شیوسینا لیڈر اور سامنا کے ایڈیٹر سنجے راوت اس ویڈیو کو دیکھنے کے بعد ٹوئٹ کرکے اپنے رد عمل کا اظہار کیا ہے۔انھوں نے لکھا ہے کہ یہ دکان گزشتہ ساٹھ سال سے ممبئی میں ہے اور اس کا پاکستان سے کوئی لینا دینا نہیں ہے،لہذا اسے نام بدلنے پر مجبور کرنے کا کوئی جواز نہیں ہے اور شیوسینا اس کی حمایت نہیں کرتی ہے۔