شہاب الدین کاکنبہ راجدسےسخت ناراض،حناشہاب نے آرجے ڈی لیڈروں سے ملاقات نہیں کی

سیوان:شہاب الدین کی موت اور انھیںدہلی میں سپرد خاک کرنے کے بعد ان کاخاندان سیوان کے اپنے گاؤں پرتاپ پور واپس آگیاہے۔شہاب الدین معاملے پرمسلمانوں میں راجدکے تئیں زبردست غصہ ہے۔آرجے ڈی نے باربارصفائی دی ہے لیکن کئی بنیادی سوال ہیں جن کاجواب نہ تیجسوی کے پاس ہے اورنہ راجدسربراہ کے پاس ہے۔شہاب الدین کی آخری رسومات میں بھی راجدکاکوئی لیڈرشریک نہیں ہوا۔اسی طرح ان کی موت کی تحقیقات کامطالبہ تک یہ کرنے کوتیارنہیں ہے۔مسلمانوں کاغصہ دیکھ کرتیجسوی یادواورپرتاپ یادونے لیپاپوتی کی کوشش کی ہے لیکن بنیادی سوال سے وہ بھاگ رہے ہیں۔ان کے اہل خانہ کے سیوان پہنچتے ہی لوگوں کا رش ان کے بیٹے اسامہ شہاب اور شہاب الدین کی اہلیہ حنا شہاب سے ملنے گیا۔ اسامہ کی آمد کے بعد آر جے ڈی کے صدر کے ایم ایل اے اور سابق وزیراودھ بہاری چودھری بھی پرتاپ پورپہنچے۔چودھری نے اسامہ سے قریب آدھے گھنٹے ملاقات کی۔ انھوں نے حنا شہاب سے ملنے کی بھی کوشش کی لیکن ملاقات نہیں ہوسکی۔ راجدلیڈروں کے دہلی نہ آنے سے کنبہ ناراض ہے۔حنا شہاب اودھ بہاری چودھری اور رگھوناتھ پور کے ایم ایل اے ہری شنکر یادو کے دہلی نہیں جانے پر ناراض ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ وہ کسی بھی ایم ایل اے سے نہیں ملیں۔ ان کے فرزنداسامہ دہلی میں شہاب الدین کے لیے اکیلے عدالت کے چکر لگاتے رہے۔اس دوران سیوان کا ایک بھی ایم ایل اے دہلی نہیں گیا۔ راجدکے اس رویے سے پورے بہارمیں تیجسوی ،لالوکے تئیں سخت غصہ ہے۔