شبیہ درست کرنے کے لیے یوگی کابینہ کی جلدتوسیع کاامکان،اے کے شرما نائب وزیراعلیٰ بن سکتے ہیں

لکھنؤ:کوروناسے نمٹنے میں ناکامی پرپوری دنیامیں بی جے پی حکومت کی کرکری ہوئی ہے۔خاص کربہاراوریوپی کی حکومت کے خلاف زبردست غصہ ہے۔آرایس ایس نے بی جے پی کی قیادت کے ساتھ میٹنگ بھی کی ہے۔اب شبیہ ٹھیک کرنے پرکام ہورہاہے کیوں کہ اگلے سال یوپی میں الیکشن ہے۔اگرعوام کایہی غصہ رہاتویوگی کے لیے مشکل ہوگی۔اتراکھنڈمیں وزیراعلیٰ بدل دیے گئے ۔کرناٹک میں بھی وزیراعلیٰ کوبدلنے کی قیاس آرائی ہے۔لیکن یوپی میں اگر ہندوتوا کارڈ کھیلناہوتویوگی بی جے پی اورآرایس ایس کی مجبوری ہیں اس لیے یوگی کوبدلنے کی بجائے وہاں کابینہ میں توسیع کرکے عوام کوبہلانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ خیال کیا جارہا ہے کہ کابینہ میں توسیع طے ہے۔ گورنر آنندی بین پٹیل مدھیہ پردیش کا دورہ منسوخ کرنے کے بعدیوپی واپس آئی ہیں۔ یوپی کے سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ اور وہ یہاں ملیں گے۔ کہا جارہا ہے کہ کابینہ میں توسیع کے حوالے سےجلد ہی تصویر واضح ہوجائے گی۔ شاید ، 28 یا 29 مئی کو ، نئے وزراء حلف لیں گے۔اترپردیش میں تین وزرا کی موت کے بعد سے یہ عہدے خالی ہیں۔ صرف یہی نہیں ، ایسی بحثیں ہیں کہ کابینہ میں کچھ نئے چہروں کو شامل کیا جاسکتا ہے۔ معلومات کے مطابق یوگی کابینہ میں وزرا کی تعداد 60 ہوسکتی ہے۔ ایسی صورتحال میں یہ دیکھا جائے گا کہ آنے والے انتخابی موسم کے پیش نظر ، کیا وزراء کی تعداد میں اضافہ کیا جائے گا؟ یا کسی کو صرف خالی آسامیوں پر ہی ذمہ داری دی جائے گی۔ تاہم سیاسی گلیاروں میں بحث جاری ہے۔