سینئر رہنماؤں کے ساتھ سونیاگاندھی کی اہم میٹنگ،کانگریس کو اب بھی راہل گاندھی کی قیادت پر بھروسہ

نئی دہلی:کانگریس کی صدر سونیا گاندھی نے ہفتے کے روز پارٹی کے سینئررہنماؤں کے ساتھ ایک میٹنگ کی۔ سونیا گاندھی کی رہائش گاہ 10 جن پتھ میں منعقدہ میٹنگ میں 20 پارٹی رہنماؤں نے شرکت کی۔ ذرائع کے مطابق اس میٹنگ میں ناراض کانگریس قائدین نے کہاہے کہ راہل گاندھی کو پارٹی کی کمان سنبھالنی چاہیے۔ اس پر راہل گاندھی نے کہا کہ پارٹی جس کردار کا فیصلہ کرے گی ، میں اسے ادا کروں گا۔ انہوں نے کہاہے کہ انتخابات ہی فیصلہ کریں گے کہ قائد کون ہوگا۔کانگریس کا یہ اہم اجلاس تقریبا 5 گھنٹے تک جاری رہا۔ اس میں پارٹی کو مضبوط بنانے کے معاملے پر تبادلہ خیال کیاگیا۔کانگریس کے لیڈرپون بنسل نے کہاہے کہ راہل گاندھی کی قیادت سے متعلق رہنماؤں میں کوئی عدم اطمینان نہیں ہے۔ اجلاس میں کانگریس کی صدرسونیا گاندھی نے کہاہے کہ ہم ایک بڑے کنبے ہیں۔ ہمیں پارٹی کومضبوط بنانے کے لیے مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔سونیا گاندھی نے کہاہے کہ ہم جلد ہی احتسابی کیمپ لگائیں گے جس میں بی جے پی سے لڑنے کی حکمت عملی بنائی جائے گی۔کانگریس کے سینئر رہنما 10 جن پتھ پرمنعقدہ اس میٹنگ کے لیے پہنچے۔ ان میں سابق وزیراعظم منموہن سنگھ ،راجستھان کے وزیراعلیٰ اشوک گہلوت ، پرتھوی راج چوان ، پی چدمبرم ، بھوپندر سنگھ ہڈا، امبیکا سونی ، منیش تیواری ، غلام نبی آزاد ، آنند شرما ، کمل ناتھ وغیرہ شامل ہوئے۔یہ میٹنگ سونیا گاندھی نے کانگریس کی لڑائی کو روکنے اورپارٹی کے نئے صدرکے انتخاب کے چیلنجوں سے نکلنے کے لیے ایک راہ تلاش کرنے کے لیے بلائی تھی۔ اس میٹنگ میں سونیا گاندھی نے پارٹی کے ناراض رہنماؤں سے بھی ملاقات کی جنہوں نے چار ماہ قبل کانگریس کے صدر کو خط لکھا تھا اور پارٹی کی قیادت پر وال اٹھائے تھے۔ اس خط کے بعد کانگریس ورکنگ کمیٹی(سی ڈبلیو سی)کے اجلاس میں سیاسی ہنگامہ برپاہوگیاتھا۔