سنیئرلیڈراورسابق مرکزی وزیر یشونت سنہا ترنمول کانگریس میں شامل

کولکاتہ:بی جے پی کے سنیئرلیڈر،سابق مرکزی وزیر اور وزیر اعظم نریندر مودی کے سخت مخالف یشونت سنہا نے ہفتے کے روز ترنمول کانگریس میں شمولیت اختیار کی ہے۔انہوں نے یہ قدم مغربی بنگال قانون ساز اسمبلی کے آٹھ مرحلے کے انتخابات سے پہلے اٹھایا ہے۔سنہا نے سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپائی کی کابینہ میں متعدد محکموں کے فرائض سرانجام دیئے ہیں ، لیکن بھگواپارٹی کی قیادت سے اختلافات کی وجہ سے انہوں نے 2018 میں بی جے پی چھوڑ دی۔ان کے بیٹے جینت سنہاجھارکھنڈ کے ہزاراری باغ سے بی جے پی کے لوک سبھاممبرہیں۔سنہا نے کہا ہے کہ ملک عجیب و غریب صورتحال سے گزر رہا ہے ، ہماری اقدار اور اصول خطرے میں ہیں۔انہوں نے کہا ہے کہ جمہوریت کی طاقت اداروں میں پنہاں ہے اور تمام اداروں کو منظم طور پر کمزور کیا جارہاہے۔سنہا (83 سال کی) نے بی جے پی کے خلاف جنگ میں مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتابنرجی کی حمایت کرنے کا حلف لیا۔لوک سبھا میں ترنمول کانگریس کے رہنما سودیپ بینڈوپادھیائے نے کہا ہے کہ ہم یشونت سنہا کو اپنی پارٹی میں خوش آمدید کہتے ہیں۔ان کی شرکت سے انتخابات میں بی جے پی کے خلاف ہماری لڑائی کو مزید تقویت ملے گی۔سنہا نے سن 1990 میں چندر شیکھر کی حکومت میں وزیر خزانہ کی حیثیت سے خدمات انجام دیں اور اس کے بعد واجپئی کی کابینہ نے بھی اس وزارت کاچارج سنبھال لیا تھا۔انہوں نے واجپائی حکومت میں وزیر خارجہ کی حیثیت سے بھی خدمات انجام دیں۔