سعودی عرب کی کبار علما کونسل نے الاخوان المسلمون کو ’دہشت گرد‘ قرار دے دیا

ریاض:سعودی عرب کی کبار علماء کونسل نے عالم عرب میں سرگرم دینی وسیاسی جماعت الاخوان المسلمون کو ’دہشت گرد تنظیم‘ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ تنظیم جماعتی اہداف کو اسلامی تعلیمات پر فوقیت دیتی ہے۔ یہ دین کی آڑ میں فتنہ انگیزی، تفرقہ بازی، تشدد اور دہشت گردی کر رہی ہے۔کبائر علماء کونسل علما کے سربراہ اور مملکت کے مفتی اعظم عبدالعزیز بن عبداللہ بن محمد آل الشیخ اور علماء کونسل کے دیگر فاضل اراکین کے دستخط کے ساتھ منگل کو جاری کردہ بیان کا حوالہ دیتے ہوئے سعودی خبر رساں ادارے ’ایس پی اے‘ کی رپورٹ میں کہا گیا کہ ’اللہ تعالی نے ہمیں حق کا ساتھ دینے اور تفرقہ وانتشار سے باز رہنے کا حکم دیا ہے۔نامور علماء پر مشتمل اعلی سعودی کونسل نے اخوان سے متعلق اپنے دو ٹوک موقف کے حوالے سے قرآنی آیات اور احادیث سے استدلال کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ ’عصر حاضر میں الاخوان المسلمون ایسی جماعتوں میں سرفہرست تنظیم ہے جو اسلامی ہدایت سے روگردانی کرتی ہیں۔ یہ ریاستی حکام کے ساتھ جھگڑے برپا کرنے، حکام کے خلاف بغاوت، مختلف ملکوں میں فتنہ انگیزی اور پر امن بقائے باہمی کے ماحول کو تہہ وبالا کرنے میں مصروف ہیں‘۔ علماء کونسل نے واضح کیا کہ ’الاخوان المسلمون مسلم معاشروں کو زمانہ جاھلیت کا نمونہ قرار دے رہی ہے‘۔علماء کونسل نے مزید کہا کہ اپنے قیام سے تادم ِتحریر اس تنظیم نے نہ تو اسلامی عقائد پر توجہ دی اور نہ قرآن وسنت کے علوم میں دلچسپی دکھائی۔ اس کا مشن اقتدار کا حصول ہے۔ اس جماعت کی تاریخ شر انگیزیوں اور فتنہ پردازیوں سے بھری ہوئی ہے‘۔ کونسل الزام عاید کیا دہشت گرد اور انتہا پسند تنظیموں نے الاخوان المسلمون کے بطن سے جنم لیا ہیجو ملک وقوم کے خلاف افراتفری برپا کیے ہوئے ہیں۔ ان تنظیموں کی تاریخ دنیا بھر میں تشدد اور دہشت گردی کے جرائم سے بھری پڑی ہے۔سعودی عرب کے جید علماء کی سوچی سمجھی رائے ہے کہ اخوان دہشت گرد تنظیم ہے۔ یہ دین مخالف جماعتی اہداف کے پیچھے دوڑنے والی جماعت ہے۔ سب لوگ اس جماعت سے خبر دار رہیں، نہ کوئی اس سے نسبت قائم کرے اور نہ ہمدردی کا اظہار کرے۔

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*