سرکاری اعزاز کے ساتھ رگھوونش پرساد کی آخری رسومات اداکی جائیں گی،نتیش کمار کا اعلان

پٹنہ:معمرسماجی وادی رہنما،سابق مرکزی وزیرآر جے ڈی کے سینئر لیڈر اور پروفیسر رگھوونش پرساد کے سانحۂ ارتحال پر پورے بہارمیں سوگ کا ماحول ہے۔آج دہلی کے ایمس میں انہوں نے آخری سانس لی۔ رگھوونش پرساد کی ناگہانی موت پر سیاسی سماجی اور مذہبی شخصیتوں نے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے ان کی رحلت کو ریاست و ملک کیلئے ناقابل تلافی نقصان قرارد یاہے۔ ریاستی وزیراعلیٰ نتیش کمار نے راشٹریہ جنتا دل کے سینئر رہنما اور سابق مرکزی وزیر رگھوونش پرساد سنگھ کی موت پرگہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔ وزیر اعلی نتیش کمار نے رگھوونش پرساد سنگھ کے صاحبزادے سے بھی بات کی اور انہیں تسلی دیتے ہوئے کہا کہ گھبرائیں نہیں۔ ہم لوگ بھی ان کی رحلت سے کافی مغموم ہیں۔انہوں نے خدا سے دعا کی کہ وہ رگھوونش بابو کی روح کو سکون عطا کرے اور اہل خانہ اور ان کے مداحوں کودکھ کی اس گھڑی میں صبر و ضبط و تحمل عطا کرے۔وزیر اعلی نتیش کمار نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا ہے کہ رگھوونش بابو ممتاز سوشلسٹ رہنما تھے۔ نتیش نے ان کے ساتھ گذارے اپنے سیاسی سفر کا بھی ذکر کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ کرپوری ٹھاکر کی کابینہ میں کابینہ کے وزیر بھی تھے۔ رگھوونش بابو نے لوک سبھا میں چار مرتبہ ویشالی پارلیمانی حلقہ کی نمائندگی کی اور مرکزی وزیر برائے دیہی ترقی کے طور پر ان کا دور انتہائی قابل تعریف رہا۔وزیراعلیٰ نے اعلان کیا کہ رگھونش پرساد کی آخری رسومات سرکاری اعزاز کے ساتھ ادا کی جائیں گی۔ انہوں نے بہار نواس واقع دہلی کے ریسیڈنٹ کمشنر کو ہدایت دی کہ رگھونش بابو کے جسد خاکی کو پٹنہ پہنچانے کا انتظام کریں ساتھ ہی ان کے صاحبزادے کے مشورے سے کام کریں۔ وزیراعلیٰ کی ہدایت پر ریسیڈنٹ کمشنر نے آنجہانی کے صاحبزادے سے ملاقات کرکے انہیں تسلی دی اورکہا کہ بہار حکومت اس معمر سماج وادی رہنما کی آخری رسومات سرکاری اعزاز کے ساتھ اداکرے گی۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ کورونا کے اس عہد میں ہم لوگوں نے ایک عظیم المرتبت شخصیت کو کھو دیا ہے۔