سنجے راوت نے کہا: ممبئی والے بیان پر کنگنا سے معافی نہیں مانگوں گا ، پہلے وہ معافی مانگے

ممبئی:شیوسینا کے رکن پارلیمنٹ سنجے راوت نے واضح کیا ہے کہ فلم اداکارہ کنگنا رناوت سے معافی مانگنے کا کوئی سوال ہی پیدا نہیں ہوتا ہے۔ اگر وہ معافی مانگیں گی اسی وقت میں اس پر غور کروں گا ۔ٹویٹر پر دونوں کے مابین زبردست لڑائی جاری ہے۔ سنجے راوت نے کہا کہ اگر وہ ممبئی پر دیے گئے بیان پر معافی مانگے گی تو میں اس پر غورکروںگا۔ کنگنا رنات نے جمعہ کو ٹویٹ کیا تھا کہ وہ 9 ستمبر کو ممبئی پہنچ رہی ہیں، کسی کے باپ میں ہمت ہے تو وہ روک لے ۔ 9 ستمبر کو ممبئی آؤنگی ۔ میں ممبئی ایئرپورٹ پر ٹائم پوسٹ کروں گی ،کسی کے باپ میں ہمت ہے تو روک لے۔ سنجے راوت بھی نہیں رکے اور جمعہ کو کہا کہ ممبئی مراٹھیوںکے باپ کی ہے۔ شیوسینا مہاراشٹر کے ایسے دشمنوں کو ختم کیے بغیر نہیں رکے گا۔ راوت نے ٹویٹ کیا کہ ممبئی مراٹھیوں کے باپ کی ہے۔ جن کو یہ منظور نہیں وہ بتائیں کہ ان کا باپ کون ہے۔ شیوسینا مہاراشٹر کے ایسے دشمنوں کو ختم کیے بغیر نہیں رکے گی۔ تاہم کنگنا سے تنازعہ کے دوران سنجے راوت نے کہا کہ ان کا کنگنا سے کوئی ذاتی معاملہ نہیں، یہ مہاراشٹر کا مسئلہ تھا، انہیں اپنا ٹویٹر ہینڈل خود استعمال کرنا چاہئے، کسی بھی سیاسی جماعت کو اپنا ٹویٹر ہینڈل استعمال کرنے کی اجازت نہیں دینی چاہئے۔ یہ شیوسینا کا مسئلہ نہیں ہے۔ مہاراشٹر کے معاملے پر سب کو ایک ساتھ آنا چاہئے۔اس دوران مہاراشٹر کی کانگریس یونٹ نے اداکارہ کنگنا رناوبت کے بیان پر آزاد میدان پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کرائی ہے۔ وکیل کاشف خان دیشمکھ نے بھی کنگنا کے خلاف شکایت کی ہے۔ کاشف نے اندھیری پولیس اسٹیشن میں اپنے بیان پر اعتراض درج کیا۔ دونوں شکایات میں ایک چیز مشترک ہے اور وہ ہے کنگنا رناوت کا ممبئی کی شبیہ کو داغدار کرنے کا الزام۔کہا جارہا ہے کہ پولیس نے ابھی تک کنگنا کے خلاف کوئی ایف آئی آر درج نہیں کی ہے۔ پولیس نے ابھی یہ کہا ہے کہ وہ ابھی اس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔