سنبھل:احتجاج کرنے والے کسانوں کو پچاس لاکھ کا نوٹس،کسان رہنما نے کہا:ہم حق کا مطالبہ کررہے ہیں،کوئی جرم نہیں کررہے

سنبھل:اترپردیش کے سنبھل ضلع میںکسان تحریک میںحصہ لینے والے کاشتکاروں کو نوٹس بھیجا جارہا ہے ۔سنبھل کسان رہنما راج پال یادو کو پہلے بھی 50 لاکھ روپے کا نوٹس بھیجا گیا تھا۔ بعد ازاں اس میں ترمیم کرکے دوسرا نوٹس بھیجا گیا۔ نوٹس کے بارے میں کسان رہنما کا کہنا ہے کہ ملک بھر میں ایمرجنسی جیسی صورتحال ہے۔ ایسا پہلے کبھی نہیں ہوا ہوگا۔ ہماری آواز دبانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ حکومت کو لگتا ہے کہ وہ ہم پر دباؤ ڈال سکتی ہے اور اس طرح وہ گھر پر بیٹھا سکتی ہے۔کسان رہنما راج پال یادو نے کہاکہ عوام سے بات کرنا یا کسانوں سے بات کرنا کوئی جرم نہیں ہے، ہم کوئی جرم نہیں کررہے ہیں، حکومت سے اپنے حقوق مانگ رہے ہیں۔ ہم اپنی بات خود کہنے جارہے تھے۔ اس میں تشدد کہاں سے ہوا۔ ہم ہر صورتحال سے نمٹنے کے لئے تیار ہیں، ہم نہ تو ضمانت کرائیںگے اور نہ ہی ہم کسی نوٹس کاجواب دیں گے۔ انتظامیہ یا حکومت جو بھی کرے ہم اسے برداشت کرنے کے لیے تیار ہیں۔انہوں نے کہا کہ نوٹس بھیجے جانے سے سنبھل کے کسانوں میں ناراضگی ہے اور ہم تحریک کی بھی تیاری کررہے ہیں۔