سماجیات پر اہم کتابوں کی اشاعت کے لیے قومی اردو کونسل پُرعزم:ڈاکٹر شیخ عقیل احمد

قومی اردو کونسل کے سوشل سائنس پینل کی آن لائن میٹنگ
نئی دہلی:قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان کے سوشل سائنس پینل کی گوگل میٹ کے ذریعے آن لائن میٹنگ کا انعقاد ہوا۔کونسل کے ڈائریکٹر ڈاکٹر شیخ عقیل احمد نے آن لائن میٹنگ میں تمام شرکا کا استقبال کرتے ہوئے کہاکہ کورونا وائرس اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے ہندوستان ہی نہیں،ساری دنیا متاثر ہوئی ہے اور سوشل ڈسٹنسنگ پر زور دیاجارہاہے،اسی وجہ سے کونسل نے آج سوشل سائنس پینل کی آن لائن میٹنگ بلائی ہے۔اس میٹنگ میں اتفاق رائے سے سابقہMinutes کو منظور کیا گیا۔سابقہ پروجیکٹس کی صورت حال کا جائزہ لیاگیا اور سماجیات پر تصنیف و تحقیق کے مختلف پہلووں سے متعلق کئی اہم مشورے بھی سامنے آئے،جن پر تبادلہئ خیال کیاگیا اور یہ طے کیاگیا کہ مزید غورو خوض کے بعد کونسل ان مشوروں کو عملی جامہ پہنانے کی کوشش کرے گی۔ انھوں نے کہا کہ وقت کے تقاضے کے مطابق سماجیات پر اہم کتابیں شائع کی جائیں گی۔ پینل کے چیئر مین پروفیسر رئیس اختر نے کہاکہ موجودہ دور میں ماحولیات کے بدلاؤ کو سمجھنا نہایت ضروری ہے اوراسی وجہ سے مختلف زبانوں میں اس پر کتابیں لکھی جارہی ہیں،ایسے میں ضرورت ہے کہ اردو زبان میں بھی ماحولیاتی تبدیلی سے متعلق اہم پہلووں پر کتابیں مرتب کی جائیں تاکہ اردو کے طلبہ کو بھی اس موضوع سے خاطر خواہ واقفیت حاصل ہوسکے۔پروفیسر رضوان قیصرنے انیسویں صدی میں مسلمانوں کے ذریعے کیے گئے اہم تعلیمی تجربوں کی نشان دہی کرتے ہوئے کہاکہ اس دور میں مسلمانوں نے جو تعلیمی ادارے قائم کیے۔ ان میں نہ صرف تعلیمی ارتقا پر توجہ دی گئی بلکہ مختلف قسم کی نظریہ سازی پر بھی زور دیا گیا، لہٰذا ضرورت ہے کہ اس ناحیے سے ان تعلیمی تجربوں کا مبسوط جائزہ لیا جائے۔پروفیسر زبیر مینائی نے مسلم خواتین ماہرین تعلیم کے مفصل تذکرہ و تاریخ مرتب کیے جانے کے سلسلے میں اپنا مشورہ دیا۔محترمہ انجلی سنگھ نے اپنے تدریسی تجربات کی روشنی میں کہا کہ مقابلہ جاتی امتحانات کی تیاری کرنے والے طلبہ و طالبات کے لیے جنرل معلومات اور کرنٹ افیئرز پر مشتمل کتابوں یا میگزین کی اشاعت پر کونسل کو توجہ دینی چاہیے۔پینل کے ممبر محترم نریش ندیم نے معروف مصنف راہل سنکرتائن کی کتاب ”درشن دگ درشن“کے ترجمے کی تجویز پیش کی۔کونسل کے ڈائریکٹر شیخ عقیل احمد نے معزز ممبران کی تجاویز کو سراہتے ہوئے کہاکہ آپ کی تجاویز بہت اہم اور قیمتی ہیں، ہم ان پر غور کریں گے اور انھیں عملی جامہ پہنانے کی کوشش کریں گے۔انھوں نے کہاکہ میٹنگ کے علاوہ بھی جب کبھی آپ کے ذہن میں کوئی اہم بات آئے یا سماجیات سے متعلق تصنیف و تحقیق کے حوالے سے کوئی تجویز ہو تو ہمیں ضرور مطلع کریں،ہم آپ کی تجویزوں کا استقبال کریں گے اوران پر عمل بھی کیا جائے گا۔ کونسل کی اسسٹنٹ ڈائریکٹر(اکیڈمک) شمع کوثر یزدانی کے اظہارِ تشکر پر میٹنگ کا اختتام عمل میں آیا۔
میٹنگ میں پروفیسر رئیس اختر،پروفیسر رضوان قیصر، ڈاکٹر عذرا عابدی، جناب نریش ندیم، ڈاکٹر ایم داؤد محسن، ڈاکٹر مظفر اسلام،پروفیسر زبیر مینائی،پروفیسر شمیم اختر، انجلی سنگھ،شمع کوثر یزدانی (اسسٹنٹ ڈائرکٹر، اکیڈمک)، ڈاکٹر فیروز عالم (اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسر)،اجمل سعید(اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسر) اورمحمد شہاب الدین (ریسرچ اسسٹنٹ) نے شرکت کی۔