راجیو دھون کی کوششیں اور مسلمان

شمیم اکرم رحمانی

راجیو دھون نے بورڈ اور جمیعت کی طرف سے ایودھیا معاملہ میں جوکوششیں کی ہیں وہ نہ صرف قابل تحسین ہیں بلکہ قانون کی بالادستی کے لیے کی جانے والی کوششوں میں بہت نمایاں ہیں ـ ہر انصاف پسند ان کی کوششوں کو سلام کرتاہے، مجھے یقیں ہے کہ ان کی کوششیں تاریخ میں سنہرے حروف سے لکھی جائیں گی اور تاقیامت وطن عزیز کی اقلیتوں کے لیے حوصلے کا سامان بنیں گی ـ
ان کی جدوجہد کو دیکھ کر شروع میں ایسا محسوس ہورہاتھاکہ بورڈ اور جمیعت انہیں خراج تحسین پیش کرتی رہیں گی اسلئے کہ مفت میں سنیروکیل کا مسلمانوں کے حق میں اور فسطائیت کے خلاف چٹان بن کر کھڑا رہناکوئ معمولی بات نہیں ہے، وہ بھی راجیودھون نام کے ساتھ! اس معاملے کی اہمیت کاادراک وہی لوگ کرسکتے ہیں،جو ہندوستانی سیاست اورسنگھ کی پلاننگ سے واقفیت رکھتے ہیں ـ
لیکن وہی ہوا جو عام طور پر مسلمانوں میں ہوتارہاہےـ لوگ سازشوں کے آلۂ کار بن جاتےہیں، تھوڑے فائدے کےلئے مخلصین کو روند دیتےہیں اور ڈبل چہرے سے کام کرکے باغباں اور صیاد دونوں کوراضی رکھناچاہتے ہیں؛چنانچہ چند گھنٹے قبل افسوسناک خبر ملی کہ راجیودھون کو جمعیت نے وکالت سےبرطرف کردیاہے-
"سوفیصد ریویو پٹیشن کے مسترد کئےجانے والی بات” سے مجھے جن چیزوں کااندیشہ تھا ان میں ایک اندیشہ یہ بھی تھا کہ راجیو دھون جیسے مخلص افراد کو کہیں معاملہ سے الگ نہ کردیاجائےـ راجیو دھون کے حالیہ بیان کہ "مسلمانوں کے ساتھ ناانصافی ہوئی ہے” نے اس اندیشے میں مزید اضافہ کردیاتھاـ
خیر جوہوناتھا وہ ہوا اوراب یہ طے ہوچکاہے ہے کہ راجیو دھون جمعیت کی طرف سے ایودھیا معاملے کے ریویو پٹیشن میں جمعیت کے وکیل نہیں رہیں گےـ راجیو دھون جی نےخود اس کی اطلاع دیتےہوئے فیسبک پر لکھاہےکہ:
I have been informed that Mr Madani has indicated that I was removed from the case because I was unwell. This is total nonsense. He has a right to instruct his lawyer AOR Ejaz Maqbool to sack me which he did on instructions. But the reason being floated is malicious and untrue.
ترجمہ:مجھے خبر دی گئی ہے کہ مسٹر مدنی کے اشارے پر مجھے کیس سے ہٹا دیا گیا ہے؛ کیونکہ میری طبعیت خراب ہےـ یہ سراسر بے بنیاد بات ہےـ انہیں حق ہے کہ اپنے وکیل کے ذریعے مجھے کیس سے ہٹا دیں جو کہ انہوں نے کیا، لیکن جو وجہ دی جا رہی ہے وہ بیہودہ اور سراسر غلط ہےـ
گویاکہ اب وہ صرف بورڈ کی طرف سے معاملے کی پیروی کریں گےـ مجھے نہیں پتہ کہ مسلم پرسنل لا بورڈ کا ان کے ساتھ کیا طرز عمل ہوگا؛ لیکن ہم بورڈ کے ذمے داروں سے ہاتھ جوڑ کر درخواست کرتےہیں کہ راجیودھون جیسے مخلص لوگوں کی ہرطرح سے حوصلہ افزائی کریں اور ریویو پٹیشن دائر کرنے میں انہیں سب سے آگےرکھیں، یہ وہ بندہ ہے،جو اس اہم معاملے کی وجہ سے ہی فرقہ پرستوں کے نشانے پر رہاہےـ

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*