راجستھان کا سیاسی بحران:کانگریس نے مایاوتی کوگھیرا،بھگوابریگیڈکے ساتھ سازبازکاالزام

جے پور:پہلے بی ایس پی اوراب کانگریس کے ایم ایل اے لکھن مینانے پیرکوراجستھان میں ہونے والی سیاسی بحران کے لیے بی جے پی کو نشانہ بنایا۔بتادیں کہ بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) نے اتوار کے روز اسمبلی میں اعتمادپرووٹنگ کے دوران گہلوت کے خلاف ووٹ ڈالنے کے لیے پارٹی چھوڑنے والے 6 ایم ایل اے کو گذشتہ سال کانگریس (کانگریس) میں شامل ہونے کے لیے ایک وہپ جاری کیا تھا۔ اس پرلکھن مینانے بی ایس پی سے سوال کیا اور پوچھا کہ بی ایس پی نے ایک سال بعدہمیں کیوں یادکیا۔انہوں نے کہاہے کہ ہم نے قانون کی بنیادپرکیاہے۔انضمام کے لیے دوتہائی ایم ایل اے کی ضرورت ہے۔ہمارے پاس کانگریس میں سبھی 6 ایم ایل اے آئے۔ انہوں نے الزام لگایاہے کہ بی ایس پی بی جے پی کے کہنے پریہ سب کررہی ہے ۔ انہوں نے مزیدکہاہے کہ یہ کانگریس کی منتخب حکومت کو غیر مستحکم کرنے کی کوشش ہے۔ لکھن مینانے کہاہے کہ ہم نے جو کچھ کیا وہ ہمارے خطے کی ترقی کے لیے کیاگیا ہے۔ ہم نے اس وقت مینا کو ان کے فیصلے کے بارے میں بتایاہے۔