راجد،ایس پی کے بعدشیوسینااوراین سی پی نے ممتابنرجی کی حمایت کااعلان کیا

ممبئی:بی جے پی کوروکنے کے لیے علاقائی سیاسی پارٹیاں ترنمول کانگریس کی حمایت کررہی ہیں اورالیکشن نہ لڑنے کااعلان کررہی ہیں۔راجد،شیوسینا،این سی پی اورسماجوادی پا رٹی نے ممتابنرجی کی حمایت کااعلان کیاہے تاکہ بی جے پی کوفائدہ نہ پہونچے۔لیکن اسدالدین اویسی اپنی ضدپرقائم ہیں ۔بالکل صاف ہے کہ مجلس کے الیکشن لڑنے سے مسلم ووٹ تقسیم ہوگاجس کاپورافائدہ بی جے پی کوہوگا۔تمل ناڈومیں جیسے ہی بی جے پی کی حلیف پارٹی کے اقتدارسے باہرہونے کاسروے آیا،اویسی نے تمل ناڈومیں الیکشن لڑنے کااعلان کردیا۔ان چیزوں سے تجزیہ نگاروں کااندازہ ہے کہ اس سے بی جے پی کوفائدہ پہونچانے کی کوشش ہے۔جب شیوسیناجیسی دوسری پارٹیاں بی جے پی کورونے کے لیے وہاں الیکشن نہیں لڑرہی ہیں اورترنمول کانگریس کی حمایت کررہی ہیں،اویسی کاوہاں اترناکئی شکوک وشبہات کوپیداکرتاہے۔ شیو سینانے مغربی ہم بنگال میں انتخابات نہ لڑنے کافیصلہ کیا ہے۔انھو ںنے وزیراعلیٰ ممتا بنرجی کو بنگال کی اصل شیرنی قرار دیا۔ ترنمول کانگریس نے اس فیصلے پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ شیوسینا نے ہمارا ساتھ دینے کا فیصلہ کیاہے۔ اسی جگہ ہماری نیشنلسٹ کانگریس پارٹی (این سی پی)کے سربراہ شرد پوار نے بھی بنگال میں ممتا کو حمایت دینے کا اعلان کیا ہے۔ وہ جلد ہی بنگال بھی جانے والے ہیں۔بتایاگیاہے کہ وہ ایک ساتھ جلسے کو بھی خطاب کرسکتے ہیں۔مغربی بنگال میں ، بھارتیہ جنتا پارٹی ممتا بنرجی کی ترنمول کانگریس کو چیلنج کررہی ہے۔ ایسی صورتحال میں راشٹریہ جنتا دل اور سماج وادی پارٹی نے بھی بی جے پی کے خلاف انتخابی جنگ میں ممتا بنرجی کی حمایت کرنے کی بات کی ہے۔اسی کے ساتھ ہی شیو سینا کے رہنماسنجے راوت نے مغربی بنگال اسمبلی انتخابات میں اپنی پارٹی کے امیدوار کھڑے نہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔اپنی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے سنجے راوت نے اپنے ٹویٹ میں لکھا ہے کہ بہت سے لوگ یہ جاننے کے خواہاں ہیں کہ شیوسینا مغربی بنگال میں الیکشن لڑے گی یا نہیں؟ لہٰذاپارٹی کے سربراہ ادھوو ٹھاکرے کے ساتھ تبادلہ خیال کرنے کے بعد آپ کے ساتھ یہ تازہ جانکاری شیئر کررہاہوں۔موجودہ منظر نامے کو دیکھیں تو ایسا لگتا ہے کہ یہ دیدی بمقابلہ بی جے پی ہے۔ پیسے ، اثرات اور میڈیا کو ممتا دیدی کے خلاف استعمال کیا جارہا ہے۔ ایسی صورتحال میں شیوسینا نے مغربی بنگال انتخابات میں حصہ نہ لینے کا فیصلہ کیا ہے اور ان(ممتا بنرجی)کے ساتھ کھڑے ہونے کا فیصلہ کیا ہے۔ ہم ان کے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ اس سے ممتا بنرجی مضبوط ترہوجائیں گی۔