ریلوے کے وزیر تارکین وطن کےلیے ٹرین چلانے کے معاملے پر سیاست کر رہے ہیں:بگھیل

نئی دہلی:چھتیس گڑھ کے وزیر اعلی بھوپیش بگھیل نے اتوار کو ریلوے کے وزیر پیوش گوئل پر تارکین وطن کے لئے ٹرین چلانے کے معاملے پر سیاست کرنے کا الزام عائد کیا اور ان سے کورونا وائرس عالمی وبا سے ریاستوں کے ساتھ مل کر لڑنے کی اپیل کی۔گوئل نے مغربی بنگال، راجستھان، چھتیس گڑھ اور جھارکھنڈ جیسی ریاستوں اور ٹرینوں کو منظوری دینے کی اپیل کی تھی۔بگھیل نے کہاکہ پیوش گوئل جی نے پہلے کہا کہ چھتیس گڑھ ٹرینوں کے لئے منظوری نہیں دے رہا ہے،ہم نے انہیں جواب دیا کہ ریاست نے تمام منظوریاں دے دی ہیں،ٹرینوں کو چلانے کے لئے چھتیس گڑھ کی طرف سے کوئی منظوری زیر التواء نہیں ہے،انہوں نے ابھی تک جواب نہیں دیا ہے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ ریلوے کے وزیر اب ریاست کی طرف سے ٹرینوں کی منظوری نہ دئے جانے کے معاملے کو چیلنج دے رہے ہیں۔گوئل نے بگھیل کو یہ ثابت کرنے کے لئے مبینہ طور پر چیلنج کیا تھا کہ مرکز نے تارکین وطن کو بھیجنے والے اور ان کی ریاستوں سے درخواست ملنے کے بعد ٹرینوں کے لئے منظوری نہیں دی ہے۔بگھیل نے رائے پور سے فون پر کہاکہ گوئل جی سے میری درخواست ہے کہ یہ سیاست کرنے یا چیلنجز دینے کا وقت نہیں ہے۔یہ کورونا وائرس عالمی وبا پرسے لڑنے کا وقت ہے،یہ تارکین وطن محنت کشوں کی مدد کرنے کا وقت ہے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ چھتیس گڑھ نے ٹرینوں کو چلانے کے لئے جموں کشمیر، اتر پردیش اور کرناٹک سمیت دیگر ریاستوں سے بھی منظوری مانگی ہے جو اب تک نہیں ملی ہے۔دراصل ٹرینوں کو چلانے کے لئے تارکین وطن کو بھیجنے والے اور ان کی منزل کی ریاستوں کی منظوری دینے کی ضرورت ہوتی ہے۔بگھیل نے کہاکہ اب ہم کیا کریں؟ اور آپ ہمیں چیلنجز دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت نے دیگر ریاستوں میں کام کر رہے تارکین وطن محنت کشوں کو چھتیس گڑھ لانے کے لئے 1.16 کروڑ روپے دئے ہیں۔