ریلوے بورڈ کی وضاحت، کرونا بحران کے باعث ریل خدمات میں کوئی تخفیف نہیں

نئی دہلی:کرونا کے بڑھتے کیسز کی وجہ سے ملک گیر سطح پر لاک ڈاؤن کے خدشات کے پیش نظر ہندوستانی ریلوے نے آج واضح کیا ہے کہ کرونا کے نام پر کسی کو بھی خوف زدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ ریلوے خدمات میں کوئی تخفیف نہیں کی جائے گی اور مطالبات کے مطابق اضافی ٹرینیں چلائی جائیں گی۔ ریلوے بورڈ کے چیئرمین اور چیف ایکزیکیٹو آفیسر (سی ای او) سنیت شرما نے یہاں ایک ورچوئل پریس کانفرنس میں کہا کہ ملک کے کسی بھی حصہ میں کسی کو یہ فکر نہیں کرنی چاہئے کہ ریلوے کی خدمات بند ہوسکتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ریلوے 1490 میل ایکسپریس ٹرینیں چلا رہی ہے ، جوکرونا سے پہلے کی مدت کے مقابلے میں 84 فیصد ہے۔ اسی طرح 92 فیصد یعنی 5387 مضافاتی خدمات بھی چل رہی ہیں۔ صرف مسافر ٹرینوں کی صورت میں 26 فیصد یعنی 947 ٹرینیں چلائی جارہی ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ مسافر ٹرینیں غیر محفوظ ہیں اور مسافروں کے کرونا ضابطہ کی اتباع مشکل ہے۔مسٹر شرماکے مطابق ان خدمات کے علاوہ ، ممبئی اور دہلی سے اپریل اور مئی کے مہینوں میں 140 اضافی ٹرینوں کے 483 پھیرے چلانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔