Home قومی خبریں ریلوے بورڈ کی ہدایات: ملازمین پر ہورہاہے67 فیصد خرچ،’ غیرضروری‘ آسامیاں ختم کرنے کی تیاری

ریلوے بورڈ کی ہدایات: ملازمین پر ہورہاہے67 فیصد خرچ،’ غیرضروری‘ آسامیاں ختم کرنے کی تیاری

by قندیل

نئی دہلی:ملازمین پر اپنے 67 فیصد اخراجات کو ناقابل برداشت بتاتے ہوئے ریلوے بورڈ نے زونز کو ہدایات جاری کی ہیں کہ وہ ان عہدوں کی نشاندہی کرکے ختم کریں جو نئی ٹیکنالوجی کی وجہ سے بے کار ہو گئی ہیں۔ بورڈ نے کہا ہے کہ عملے کو ایسے عہدوں پر دوبارہ تعینات کیا جائے جہاں افرادی قوت کی ضرورت ہو اور اگر ضروری ہو تو کچھ کام آؤٹ سورس کیا جا سکتا ہے۔ریلوے بورڈ کے سی ای او اور چیئرمین وی کے ترپاٹھی نے تمام ریلوے زونوں کے جنرل منیجروں کو لکھے ایک خط میں کہا ہے کہ ایسی پوسٹوں کی نشاندہی کی جانی چاہیے اور ایک ماہ کے اندر ملازمین کو دوبارہ تعینات کیا جانا چاہیے۔ انسانی وسائل ہندوستانی ریلوے کیلئے بہت قیمتی ہیں۔ خاص طور پر موجودہ دور میں جب 67 فیصد خرچ افرادی قوت پر ہو رہا ہے اور ایسا لگاتار ہوتا دکھائی دے رہا ہے جو مستقبل میں ادارے کے لیے قابل برداشت نہیں ہو گا۔ترپاٹھی نے جنرل منیجرز کو لکھے ایک خط میں کہا کہ یہ ضروری ہے کہ افرادی قوت کو مؤثر طریقے سے، موثر اور جہاں بھی ضروری ہو استعمال کیا جائے۔ اس لیے تنظیمی ڈھانچے کو بہتر بنانے کے لیے افرادی قوت کے استعمال کو معقول بنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ ان زمروں میں کام کرنے والے ملازمین جہاں افرادی قوت کا استعمال کم اور غیر ضروری ہے، انہیں مزید فوری زمروں میں دوبارہ تعینات کیا جا سکتا ہے جہاں آسامیاں موجود ہیں۔ اور اگر ضروری ہو تو کام آؤٹ سورس کیا جا سکتا ہے۔

You may also like

Leave a Comment