ریل پٹریوں کے قریب تعمیرشدہ کچی آبادیوں کو ہٹانے کےلیے تیواری نے گوئیل کو خط لکھا

نئی دہلی:بی جے پی کے ممبر پارلیمنٹ منوج تیواری نے ایک بہتر منصوبہ بندی کرنے اور دارالحکومت میں ریلوے پٹریوں کے آس پاس تعمیر شدہ 48000 کچی آبادیوں کو ختم کرنے کے سپریم کورٹ کے حکم پر عملدرآمد کرنے کے لئے وزیر ریلوے پیوش گوئل کو خط لکھاہے اوراروند کجریوال سمیت تمام فریقوں کا مشترکہ اجلاس بلانے کی درخواست کی ہے۔ تیواری نے دہلی کے وزیر اعلی کو بھی ایک خط لکھا ہے اور متاثرہ کچی آبادی کے رہائشیوں کی بحالی اور ان کے قیام کے انتظامات کرنے کی درخواست کی ہے۔ وزیر ریلوے کو لکھے گئے خط میں شمال مشرقی دہلی کے رکن پارلیمنٹ تیواری نے کہا ہے کہ اس معاملے میں کاروائی کرنے کے لئے تمام فریقوں کے مابین بہتر بات چیت اور ہم آہنگی ضروری ہے۔ سپریم کورٹ نے 31 اگست کو اپنے حکم میں دہلی کے تقریبا 140 کلومیٹر لمبے ریلوے پٹریوں سے چار ماہ کے اندر 48000 کچی آبادیوں کو ہٹانے کا حکم دیا ہے۔ کجریوال کو لکھے گئے ایک خط میں، انہوں نے کہا ہے کہ یہ ریاستی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ کچی آبادی کے رہائشیوں کو ہٹائے اور انہیں رہائش فراہم کرے تاکہ کووڈ19 کی وبا کے دوران ان کی جان کو خطرہ نہ ہو۔