راہل گاندھی نے چینی دراندازی کاپھردعویٰ کیا،کہا،سچ بولنا ہی حب الوطنی

نئی دہلی:ہندوچین فوجی تصادم کے بعدکانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے مرکزمیں بی جے پی حکومت کونشانہ بناتے ہوئے حکومت پرحملہ کیا۔ انہوں نے کہاہے کہ مجھے اس بات کی فکرنہیں ہے کہ میرا سیاسی مستقبل تباہ ہوجائے گا لیکن میں ہندوستانی سرزمین میں چینی دراندازی کے بارے میں جھوٹ نہیں بولوں گا۔راہل گاندھی نے ایک ویڈیو بھی شیئر کی ہے۔ بتادیں کہ 15 جون کو بھارت اور چین کے مابین فوجی تصادم میں 20 ہندوستانی فوجیوں نے جانوں کا نذرانہ پیش کیاتھا۔پیرکوویڈیوپیغام شیئرکرتے ہوئے راہل گاندھی نے اپنے ٹویٹ میں لکھاتھاکہ چین کی فوج نے بھارتی سرزمین پرقبضہ کر لیاہے۔ حقیقت کو چھپانا اور انہیں ایسا کرنے دینا’’دیش ورودھی ‘‘عمل ہے۔ لوگوں کی توجہ اس طرف مبذول کراناحب الوطنی ہے۔کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے ویڈیوپیغام میں کہاہے کہ بطور ہندوستانی میری پہلی ترجیح ملک اور اس کے عوام ہیں۔ یہ بات بالکل واضح ہے کہ چینی ہمارے علاقے میں داخل ہوئے۔ یہ چیز مجھے پریشان کرتی ہے۔میراخون ابلنے لگتا ہے کہ ہمارے علاقے میں ایک اورملک کیسے داخل ہواہے۔