راہل گاندھی کی مزدوروں کو صبر کی تلقین، ادھیررنجن چودھری نے مرکزکے پیکیج کو مذاق قرار دیا

نئی دہلی:کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے مہاجر مزدوروں سے منسلک ایک ویڈیو شیئر کرتے ہوئے کہاہے کہ یہ مزدورملک کے وقارکے پرچم ہیں۔اسے کبھی بھی جھکنے نہیں دیں گے۔ ان کی چیخ حکومت تک پہنچائی جائے گی اور ان کومدددلائی جائے گی۔ انہوں نے ٹویٹ کیاہے کہ تاریکی گھنی ہے۔ مشکل گھڑی ہے، ہمت رکھیں۔ہم ان سب کی حفاظت میں کھڑے ہیں۔حکومت تک ان کی چیخ پہنچاکے رہیں گے، ان کا حق دلاکے رہیں گے۔ کانگریس لیڈر نے کہاہے کہ ملک کی عام عوام نہیں، یہ تو ملک کے وقارکے پرچم ہیں۔ یہ کبھی بھی مڑنے نہیں دیں گے۔ادھرلوک سبھا میں کانگریس پارٹی کے لیڈرادھیررنجن چودھری نے کوروناوائرس سے متعلق این ڈی اے حکومت کے اقتصادی پیکیج کو ایک تماشا اورکروڑوں لوگوں کے مصائب کے ساتھ ظالمانہ مذاق بتایاہے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہاہے کہ راہل گاندھی کے مجوزہ’’نیائے منصوبہ‘‘اس صورت حال میں وسیع پیمانے پرمؤثرہوتا۔مغربی بنگال سے پانچ بارکے ایم پی چودھری نے 3000 کروڑروپے خرچ کرکے ایک مجسمہ بنوانے کے لیے مرکز پر نشانہ لگایا اورکہاہے کہ حکومت ان لوگوں کے مسائل کو دور کرنے میں ناکام رہی ہے جووائرس کی وجہ سے لاگولاک ڈاؤن میں ملازمت کھو چکے ہیں اور بحران کا سامنا کر رہے ہیں۔انہوں نے ٹویٹ کرکے کہاہے کہ 20 لاکھ کروڑ کے خودکفیل پیکیج میں وائرس ویکسین کی تحقیق کے لیے کوئی ٹھوس مالیاتی قانون نہیں ہے۔پی ایم کیئرس میں اس ویکسین کے لیے 100 کروڑ روپے کی معمولی رقم دی گئی ہے۔چودھری نے کہاہے کہ ویکسین کے لیے کافی سرمایہ کاری کی ضرورت ہے اور حکومت کو اس بارے میں کنجوسی نہیں کرنی چاہیے۔