راحت اندوری کی یاد میں ریاض میں طرحی مشاعرے کا انعقاد

ریاض:مشاعروں کی دنیا کے طرح دار اور مزاحمت کی بلند و بالا آواز راحت اندوری کی یاد میں ادارہ ادب اسلامی اور ایف آئی سی ریاض سعودی عرب کے زیر اہتمام ایک آن لائن بین الاقوامی زوم مشاعرہ انعقاد کیا گیا۔ راحت اندوری کے دو مصرعے ’’ ہمارے منہ سے جو نکلے وہی صداقت ہے، ، اور’’میں چاہتا ہوں کوئی اور کاروبار کروں ،،بطور طرح دیئے گئے تھے ،جن پر شعراء کرام نے شاندار گرہیں لگائیں۔
مشاعرے کا آغازقاری منت اللہ کی تلاوت کلام اللہ سے ہوا ، اس کے بعد جمیل احمد نے رضوان الہ آبادی کی حمد جبکہ حسان عارفی اور اسمعیل روشن نے نعت پاک پڑھی ۔اس مشاعرے کی صدارت پانچ شعری مجموعوں کے خالق اورعالمی شہرت یافتہ شاعر افتخار راغب نے کی جبکہ نظامت کے فرائض منصور قاسمی نے انجام دیئے اور مہمان خصوصی کی حیثیت سے معتبر شاعر ظفر فاروقی موجود رہے ۔منصور قاسمی نے راحت اندوری کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا:راحت اندوری اپنے کلام اور آواز سے ہر دور میں پہچانے جائیں گے ، ان کی دلکش اور سحر طراز شاعری ہمیشہ سنی جائے گی ۔اس مشاعرے میں ہندو پاک کے علاوہ خلیجی ممالک کے بہت سے سامعین شریک تھے ۔حسان عارفی کے کلمات تشکر کے ساتھ مشاعرہ کا اختتام ہوا۔

    Leave Your Comment

    Your email address will not be published.*