پروفیسر سید عبدالقادر جعفری کے انتقال پر تعزیتی نشست

بنارس:شعبہ فارسی بنارس ہندویونیورسٹی میں پروفیسرسید عبدالقادر جعفری کے انتقال پر ایک تعزیتی نشست کا انعقاد ہوا جس کی صدارت شعبہ کے صدر پروفیسر سید حسن عباس نے کی۔ انھوں نے اپنے صدارتی بیان میں کہا کہ پروفیسر جعفری کی علمی و ادبی اور تدریسی خدمات کا دائرہ بہت وسیع رہا ہے، انھوں نے فارسی زبان و ادب کے لیے نمایاں خدمات انجام دیں۔مرحوم نہایت شفیق اور ہمدرد استاد تھے، اکثروبیشتر ہمارے فارسی و عربی شعبے میں تشریف لاتے تھے۔ ان کی سادگی و شرافت کا ذکر ہرشخص کرتا ہے۔ ان کے انتقال سے یقینا فارسی زبان و ادب کا بڑا نقصان ہواہے۔ واضح رہے کہ پروفیسر سید عبدالقادر جعفری فرزند صلاح الدین جعفری 1951ء میں مچھلی شہر میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی اور متوسط تحصیلات کے بعد الہ آباد یونیورسٹی سے فارسی میں بی اے، ایم اے اور پی ایچ ڈی کی ڈگریاں حاصل کیں۔کچھ عرصہ اسلامیہ انٹر کالج میں تدریسی خدمات انجام دینے کے بعد گوہاٹی یونیورسٹی چلے گئے جہاں 1982تا 1987ء بحیثیت لکچرر رہے، پھر وہاں سے الہ آباد یونیورسٹی آئے،جہاں پروفیسر اور صدر شعبہ کی حیثیت سے ایک طویل عرصے تک تدریسی خدمات انجام دیں۔ وہ عربی اور فارسی شعبے کے صدر بھی رہے۔ انھوں نے فارسی زبان و ادب کے لیے نمایاں خدمات انجام دیں۔اس موقع پر ڈاکٹر محمد عقیل نے کہا کہ پروفیسر جعفری جب بھی بنارس تشریف لاتے تھے تو سب سے تپاک اور خوشدلی سے ملتے تھے اور ہروقت ہرقسم کی علمی مدد کے لیے تیار رہتے تھے۔ڈاکٹرمغیث احمد نے پروفیسر جعفری کے انتقال کو فارسی زبان و ادب کے لیے بڑا خسارہ قرار دیا، اس موقع پر ڈاکٹر قمر عالم نے بھی اپنے تاثرات کا ظہار کیا۔ آخر میں مرحوم کے لیے دعائے مغفرت کی گئی۔