پروفیسر محمد شفیع کے نام سے آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کا ایوارڈ قابل ستائش:محمد خلیل سائنٹسٹ

نئی دہلی:سائنس اردو اکیڈمی کے چیئرمین محمد خلیل نے آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کی جانب سے 12 فروری ’عالمی یونانی میڈیسن ڈے‘ کے موقع پر تفویض کیے جانے والے ایوارڈز میں پروفیسر محمد شفیع علیگ (معروف اردو نواز، جغرافیہ داں اور سابق پرو وائس چانسلر، علی گڑھ مسلم یونیورسٹی) کے نام سے ایوارڈ کا اضافہ کیا ہے، جو یقینا قابل ستائش ہے۔ محمد خلیل نے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر محمد شفیع نے ملک و بیرون ملک جغرافیہ میں جو کام کیا اور شہرت حاصل کی اس کا گویا آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس نے اعتراف کیا اور طب یونانی کے عین مزاج کے مطابق اردو اور سائنس کو یکساں فروغ دینے کے لیے ہی طبّی کانگریس نے اپنے پروگرام کا حصہ بنایا، اس کے لیے ہم آل انڈیا یونانی طبّی کانگریس کے ذمہ داروں کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ انہوں نے مزیدکہاہے کہ دور حاضر میں لوگ اس قدر احساس کمتری میں مبتلا ہوچکے ہیں کہ اردو کو سائنس کی زبان تسلیم کرنے میں جھجک محسوس کرتے ہیں۔ جبکہ اردو ادب شعر و شاعری کے ساتھ سائنس کی بھی زبان ہے۔ طب یونانی میں اردو کی لازمیت اور ماضی میں عثمانیہ یونیورسٹی میں ایم بی بی ایس کا ذریعہ تعلیم اردو ہونا اس کا بین ثبوت ہے۔ واضح ہو کہ پدم شری پروفیسر (حکیم)سیّد ظل الرحمن کو پہلا ’’محمد شفیع علیگ انٹرنیشنل ایوارڈ‘‘ دیا جانا طے ہوا ہے اور سیّد ظل الرحمن صاحب خود بھی سائنس اور اردو زبان میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں۔