پرینکا گاندھی کا مرکزی حکومت پرحملہ

نئی دہلی:کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے انفیکشن کو دیکھتے ہوئے مرکزی حکومت نے لاک ڈائون کے دوسرے مرحلے کو ختم ہونے سے پہلے جمعہ کی شام کو تیسرے مرحلے کا اعلان کر دیا ہے۔ تیسرے مرحلے کا لاک ڈاؤن دو ہفتے کے لئے بڑھا دیا گیا ہے۔ یعنی 4 مئی سے 17 مئی تک لاک ڈائون رہے گا۔ ملک کے مختلف ریاستوں میں پھنسے مزدور اور طالب علموں کی تعداد کافی زیادہ ہے۔ کئی ریاستوں میں مہاجر مزدوروںکو کھانے سمیت تمام طرح کی پریشانیاں ہو رہی ہیں۔ حالانکہ ہر ریاستی حکومتوں کا دعوی ہے کہ وہ مزدوروں کو کھانا اور رہنے کی جگہ مہیاکر ارہے ہیں۔ایسے میں کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی یوپی حکومت پر نشانہ لگایا ہے۔ بھدوہی میں کووڈ-19 کے لئے سرکاری محکمہ کی طرف سے پی ایم کیئر سو سو روپے فنڈ اکٹھے کرنے کو لے کر انہوں نے حملہ کیا ہے۔ پرینکا گاندھی کہا کہ ایک جب عوام پریشانی کا سامنا کر رہی ہے۔ راشن، پانی، نقد رقم کی قلت ہے۔ اور سرکاری محکمہ سب سے سو سو روپے پی ایم کیئر کے لئے وصول رہا ہے۔ اس وقت میں مناسب ہوگا کہ پی ایم کیئر کی سرکاری آڈٹ بھی ہو؟مرکزی حکومت پر بھی حملہ کرتے ہوئے کہا کہ ملک سے فرار بینک چوروں کے 68000 کروڑ معاف ہوئے اس کا حساب ہونا چاہئے۔ بحران کے وقت عوام کے سامنے شفافیت اہم ہے۔ اس میں دونوں عوام اور حکومت کی بھلائی ہے۔