Home قومی خبریں پرشانت بھوشن کو دہلی بار کونسل نے نوٹس بھیجا، 23 اکتوبر کو پیش ہونے کا حکم

پرشانت بھوشن کو دہلی بار کونسل نے نوٹس بھیجا، 23 اکتوبر کو پیش ہونے کا حکم

by قندیل

نئی دہلی:ٹویٹ معاملے میں سپریم کورٹ کے ذریعہ سزا یافتہ پرشانت بھوشن کو بار کونسل دہلی نے 23 اکتوبر کو پیش ہونے کی ہدایت کی ہے۔ بار کونسل دہلی نے اس کے لئے ایک میٹنگ کی تھی اور بار کونسل آف انڈیا کے خط کا اعتراف کرنے کے بعد پرشانت بھوشن کو پیش ہونے کی ہدایت دی گئی ہے اور اسی کے ساتھ ہی 15 دن کے اندر جواب داخل کرنے کو کہا گیا ہے۔بار کونسل دہلی کا اجلاس 18 ستمبر کو ہوا۔ بار کونسل آف انڈیا کی جانب سے لکھا گیا خط اجلاس کے ایجنڈے میں لیا گیا تھا۔ پرشانت بھوشن کے معاملے میں سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد بار کونسل آف انڈیا نے اس معاملے کو بار کونسل دہلی کے پاس بھیج دیا۔ پرشانت بھوشن کو سپریم کورٹ کے ذریعہ سزا سنانے کے بعد بار کونسل آف انڈیا نے اس معاملے میں میٹنگ کی اور ایک قرارداد منظور کی جس میں کہا گیا کہ پرشانت بھوشن کے ٹویٹ کے مواد کی مکمل جانچ پڑتال کی ضرورت ہے۔ بار کونسل آف انڈیا نے بار کونسل دہلی سے قانون کے تحت اس کیس کی پیروی کرنے کو کہا تھا۔بار کونسل آف انڈیا نے اس معاملے میں لکھے جانے والے خط کوایجنڈے میں لیا اور پرشانت بھوشن کو اپنا کیس پیش کرنے کے لئے 15 دن کی مہلت دی۔ اسی کے ساتھ ہی پرشانت بھوشن کو 23 اکتوبر کو دہلی کی بار کونسل کے دفتر میں پیش ہونے کو کہا گیا ہے، اگر وہ چاہتے ہیں کہ انہیں ورچوئل انداز میں پیش ہوں تو وہ بار کونسل کو تین دن پہلے آگاہ کریں اور انہیں ورچوئل کانفرنسنگ کے ذریعے بھی پیش کیا جاسکتا ہے۔ دہلی کی بار کونسل نے پرشانت بھوشن سے کہا ہے کہ وہ یا تو خود پیش ہوں یا وہ کسی وکیل کے ذریعہ پیش ہوسکتے ہیں۔ یہ بھی کہا گیا ہے کہ اگر وہ مقررہ مدت میں جواب داخل نہیں کرتے ہیں تو اس پر غور کیا جائے گا۔ نیز اگر وہ پیش نہیں ہوتے ہیں تو دہلی کی بار کونسل صرف ان کی غیر موجودگی میں ہی کاروائی کرے گی۔

You may also like

Leave a Comment