پوری دنیا ایک مشہور عربی ادیب اور جید عالمِ دین سے محروم ہوگئی :مولانااحمدولی فیصل رحمانی

 

مونگیر: مشہورادیب اورعالم دین مولانانورعالم خلیل امینیؒ استاذدارالعلوم دیوبندکے انتقال پرمولانااحمدولی فیصل رحمانی سجادہ نشیں خانقاہ رحمانی مونگیرنے تعزیت کااظہارکیاہے۔سجادہ نشیں نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہاہے کہ مولانانورعالم خلیل امینی ،اردواورعربی کے ایسے ادیب تھے جن کے قلم اورعلم کاسکہ عرب وعجم میں چلتاتھا۔آج پوری دنیاایک مشہورادیب اورقابل ترین عالم دین سے محروم ہوگئی۔وہ نہایت نفیس ،متین اورباوقارعالم دین تھے ۔اپنی تحریری خدمات کے ساتھ ساتھ وہ تاحیات درسی خدمات انجام دیتے رہے۔یہ دارالعلو م دیوبندکے ساتھ ساتھ پوری ملت کابڑانقصان ہے۔مولاناامینی ؒ،امیرشریعت مولانامنت اللہ صاحب رحمانی ؒ سے عقیدت اوروالدماجدامیرشریعت مولانامحمدولی صاحب رحمانیؒ سے دوستانہ محبت رکھتے تھے۔دونوں سے ان کے گہرے مراسم اورخانقاہ رحمانی سے گہری وابستگی تھی۔وہ خانقاہ رحمانی کی تحریکات کے مﺅیدرہے۔انھوں نے اپنی زندگی کاآخری مضمون امیرشریعت مولانامحمدولی صاحب رحمانی ؒ کے سانحہ ارتحال پرلکھا،علاوہ ازیں مولانامنت اللہ صاحب رحمانیؒ کی خدمات پران کی بیش قیمت تحریران کی عقیدت ومحبت کاپتہ دیتی ہے۔سجادہ نشیں مولانااحمدولی فیصل رحمانی نے ان کے اہل خانہ اوردارالعلو م دیوبندکے ساتھ اظہاریکجہتی کرتے ہوئے بڑے نقصا ن پرافسوس کااظہارکیاہے۔ان کے لیے خانقاہ رحمانی میں مغفرت اوربلندی درجات کے لیے خصوصی دعاﺅں کااہتمام کیاگیا۔